زمین سے مماثل ترین سیارہ ٹی اور آئی 700 ڈی: ایک مصور کا ٹیکیل۔  (تصاویر: ناسا / میڈیا میڈیا)

زمین سے مماثل ترین سیارہ ٹی اور آئی 700 ڈی: ایک مصور کا ٹیکیل۔ (تصاویر: ناسا / میڈیا میڈیا)

پیساڈینا ، کیلیفورنیا: سسٹم شمسی سے دُور ، زمین پر کسی اور سیارے کی تلاش سائنسدانوں کو حاصل تھی ، اب تک وہ سب سے مضبوط امیدوار سیارہ دریافت ہے جو جسامت اور کمیت میں واقع ہوا تھا جس کا مطلب یہ تھا کہ وہ خود بھی واقعی فاشے پر ہے۔ کہ وہاں زندگی کی موجودگی ضروری ہے۔

امریکہ میں واقع ہارورڈ اسمتھسونیئن سینٹر فار ایسٹروفزکس کے سائنسدانوں نے ” ایسٹروفزیکل جرنل ” کے تازہ ترین شمارے میں تین مقالات شائع کروائے ہیں جن میں یہ دریافت تفصیل بیان کیا ہے۔ (مقالہ 1، مقالہ 2، مقالہ 3)

یہ سیارہ ہوا ” ٹی اور آئی 700 ڈی ” (TOI-700d) کا نامزد کیا گیا ہے ، زمین سے 102 نوری سال دوری واقعہ ہے اور اس کی ٹرانزٹنگ ایگزوپلینٹ سروے اسٹیلائٹ ” (ٹی ای ایس) خلائی مشن کا ڈیٹا کھنگالنے بعد میں دریافت کیا ہوا؟

تجزیئے کے مطابق ، اس سے پہلے ہی نظامی شمسی سے باہر دیافت میں آئے ہوئے لوگ تمام سیاروں کی زمین سے مماثل ترین سیارہ ہیں ؛ یعنی آپ کی کمیت اور جسامت کی زمینوں سے بالکل درست ہے۔

اس مرکزی ستارے کا نام ‘ٹی اور آئی 700 اے’ ‘(TOI-700a)۔ یہ ایک ” بونا ستارہ ” ہے جس نے اپنا تعزیت شباب گزارنے کے بعد کیا خاص طور پر مدھم پڑھ لیا ہے اس کا درجہ حرارت بھی سورج کا متنازعہ ہے۔ (واضح رہے کہ ہمارا سورج اپنے عہدِ شباب سے قریب قریب پانچ ارب سال تک جاری ہے)

بندوں کی وجہ سے اس کی گردش ہے ‘زندگی کے سازگار علاقہ’ (رہائش پذیر زون) بھی اس سے خاص طور پر کم فاصلے واقع ہیں ہے اور ” ٹی او آئی 700 ڈی ” اسی علاقوں میں گردش واقع ہے۔

جب اس سیارے میں ایک ایسی خصوصیت موجود ہے جو وہاں موجود ہے تو وہ بھی زمین جیسا کرسا فضائی ہے؟ وہاں بھی مائع حالت میں پانی وافر موجود ہے؟ کیا وہاں بھی زندگی کا وجود ہے؟ تیسرے مقالے میں ماہرین اس سیارے کی زمین پر کرہ ہوائی ، پانی اور زندگی کی موجودگی سے متعلق پوری پوری امکان کا اظہار کرتی ہے۔

البتہ ، اس نے یہ بھی تسلیم کیا ہے کہ کوئی بھی فاٹا دوری نہیں ہے ، کوئی خلائی مشن بھی نہیں ہے جو کسی دوری پر کوئی سیارے کرہ فضائی ہے اور وہاں مائک حالت میں پانی موجود ہے یا اس کے بارے میں کچھ معلوم نہیں ہے۔ ے۔۔ اس کے علاوہ ، مستقبل کے بارے میں بھی کوئی منصوبہ موجود نہیں ہے۔

کوئی خاص خلائی مشن تیار نہیں ہوتا جو اس کے تمام سوالات ہوتے ہیں اور جوابات کی فراہمی کرتے ہیں۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here