طویل مدت کے پاکستان کرکٹ سیٹ میں شمولیت پر خوش ہوں ، یونس خان۔  فوٹو: فائل

طویل مدت کے پاکستان کرکٹ سیٹ میں شمولیت پر خوش ہوں ، یونس خان۔ فوٹو: فائل

لاہور: سابق کپتان یونس خان 2 سال کے قومی ٹیم کے بیٹنگ کوچ کی میزبانی کر رہے تھے۔

سابق کپتان یونس خان کو 2 سال کے لئے قومی ٹیم کی بیٹنگ کوچ تیار کی گئی تھی ، یونس خان کی تقسیم کم از کم آئی سی سی ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ 2022 تک جاری رہی۔ اکتوبر / نومبر 2022 میں آسٹریلیا میں شیڈول ایونٹ کا فائنل 13 نومبر کو کوئٹہ تھا ، اس سے قبل یونس خان نے انگلینڈ میں بھی دورہ کیا تھا ، نیشنل کرکٹ ٹیم بھی بیٹنگ کوچ کی صورتحال سے متعلقہ داریاں ادا کر رہی ہیں۔ سابق کپتان اب وزٹ نیوزی لینڈ میں بھی اپنا کردار ادا کریں گے جب پاکستان کرکٹ ٹیم 23 نومبر کو نیوزی لینڈ کے روانہ ہوگی۔

قومی کرکٹ ٹیم کے ساتھ مصروفیت نہیں ، یونس خان حنیف محمد ہائی پرفارمنس سنٹر کراچی میں بھی بیٹنگ کوچ کی صورتحال سے کام کرنا چاہتے ہیں۔ اس سلسلے میں نیشنل ہائی ہائی پرفارمنس سینٹر ایک مکمل پروگرام تشکیل دے رہا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے ایگزیکٹو وسیم خان کا کہنا ہے کہ یہ خوشی کی بات ہے یونس خان اب کم از کم 2 اگست کو بیچنگ کوچ کی ٹیم سے کام لے کر آئے گا ، اگر وہ انگلینڈ میں مختصر وقت کے لئے ٹیم کے ساتھ موجود تھے۔ تاہم اس کے بارے میں ان لوگوں کے بارے میں جو فیڈ بیک ملاحظہ کرتے ہیں وہ بہت اچھا ہے۔

یونس خان کا یہ کہنا تھا کہ پاکستان کرکٹ ٹیم نے ایک طویل مدت کے دوران شرکت کی خوشی منائی ، انگلینڈ میں قومی کرکٹ ٹیم کے ساتھ کام کرنا تھا جس سے وہ بہت لطف اٹھاسکتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ اب وہ نیوزی لینڈ کے دور دراز انسانوں کے ساتھ دوبارہ کام کرنے کے لئے منتقلی کرتے ہیں اور خوشی محسوس کرتے ہیں کہ اس کام کے دائرہ کار کو وسیع کر دیا گیا ہے ، وہ ڈومیسٹک سطح پر کام کرنے میں بھی دلچسپی سے دوچار ہیں۔ ہم بلے بازوں کے بچوں میں نشہ لایا جاسکے۔

دوسری ٹیم پی سی بی سابقہ ​​ٹیسٹ اسپنر ارشد خان کو قومی ٹیم کی ٹیم کا بولنگ کوچ بھی مقرر ہوا جب اس کا دورہ نیوزی لینڈ کیلئے اسپورٹ اسٹاف کا بھی اعلان ہوا۔

قومی کرکٹ ٹیموں کے اسپورٹ اسٹاف میں منصور رانا (منیجر) ، مصباح الحق (ہیڈ کوچ) ، شاہد اسلم (اسسٹنٹ کوچ) ، وقار یونس (باؤلنگ کوچ) ، یونس خان (بیٹنگ کوچ) ، عبد المجید (فیلڈنگ کوچ) ، کلف ڈیکن (فزیوتھیراپسٹ) ، ابراہیم بادیس (ٹیم اینڈ میڈیا میڈیا منیجر) ، ملنگ علی (ٹیم مساجر) ، ڈاکٹر سہیل سلیم (ٹیم ڈاکٹر) ، طلحہ اعجاز بٹ (ٹیم اینالسٹ) ، کرنل (ر) عثمان انوری (سیکیورٹی منیجر) اور یاسر ملک (اسٹرینتھ اینڈ کنڈیشنگ کوچ) ہیں۔

پاکستان شاہینز میں اعجاز احمد (منیجر اور ہیڈ کوچ) ، مہتشم راشد (اسسٹنٹ منیجر اینڈ فیلڈنگ کوچ) ، راؤ افتخار (بولنگ کوچ) ، حافظ نعیم (فزیوتھیراپسٹ) ، صبور احمد (ٹرینر) ، عثمان ہاشمی (ٹیم اینالسٹ) اور محمد عمران علی (ٹیم مساجر) شامل ہوئے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here