بغاوت کے مقدمات ملک کے معروف اخبارات کے ایڈیٹرز پر فہرست کی فہرست ہے ، فوٹو: فائل

بغاوت کے مقدمات ملک کے معروف اخبارات کے ایڈیٹرز پر فہرست کی فہرست ہے ، فوٹو: فائل

نئی دہلی: دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کی خود ساختہ دعوے دار ہندوستان میں مودی سرکار کو تنقید کا نشانہ بنانا اپوزیشن پوزیشن رہنما ششی تھرور رہ گیا

عالمی خبر رساں ریاست کے مطابق ہندوستانی ریاست اترپردیش اور مدھیہ پردیش کی پولیس کا صدر پارٹی کا سرکردہ رہنما ششی تھرور اور ملک کے دیگر 6 سرکردہ صحافی کی دکانوں میں ہونے والے بغاوت کے مقدمات درج ہونے کے باوجود کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی۔

اس نے 26 جنوری کو ہندوستان کے جمہوریہ کے موقع پر کسانوں کی ٹریکٹر ریلی کو نئی دہلی میں داخلہ اور لال قلعے گنبد پر اسکی پرچم کو ختم کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔

یہ خبر پڑھیں: بھارتی یوم جمہوریہ پر کسانوں کا لال قلعے دھاوا ، خالصتان کا جھنڈا لہرا دیا

جرنلسٹ کی دکانوں پر بغاوت کے مقدمات کی فہرست لوگوں میں معروف صحافی راج دیپ سر دیسائی ، نیشنل ہیراالڈ کے ایڈیٹر مرنال پانڈے ، قومی آواز کے مدیر ظفر آغا اور کارواں میگزین سے وابستہ اننت ناتھ اور ونود جوز کی نام شامل نہیں تھی۔ اپوزیشن جماعت ان کے رہنما ششی تھرور اور اعلی درجے کی صحافی کی دکان پر بغاوت مقدمات کو بزدلانہ عمل سفر۔

دوسری صحافی کی دکانوں کی تنظیم ” ایڈیٹرز گلڈ ” ہندوستانی حکومت کی اس ظالمانہ کوٹہ آزادی صحافت پر حملہ کی یقین دہانی کرائی گئی ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here