سائنسدانوں نے کم از کم چار ہزار ریڈیو سگنلز کے بارے میں بتایا کہ قریب قریب کسی بھی قسم کی خلائی زندگی کا انحصار نہیں ہوا۔  (فوٹو: فائل)

سائنسدانوں نے کم از کم چار ہزار ریڈیو سگنلز کے بارے میں بتایا کہ قریب قریب کسی بھی قسم کی خلائی زندگی کا انحصار نہیں ہوا۔ (فوٹو: فائل)

لاس اینجلس: امریکی سائنسدانوں نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ دور دراز سے لوگوں کو ریڈیو سگنل دریافت کرلیے ہیں جو کسی ذہانت سے نہیں بچ رہے ہیں۔ سادہ لفظ میں اس دعوے کے بارے میں یہ بات بتائی گئی ہے کہ ترقیاتی ہفتے کے دن انسانوں سے رابطے کرنے والے ریڈیو سگنل بھیجتے ہیں۔

اس تحقیقاتی یونیورسٹی آف کیلیفورنیا لاس اینجلس (یو سی ایل اے) اور گرین بینک آبروزروٹری ، ویسٹ ورجینیا کے 40 ماہرین پر ایک وسیع ٹیم ہے آج ہی ” آرکیائیو ڈاٹ آرگ ” پر شائع ہوا ہے فل جبکہ فلکیکی فل تحقیند مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست مست ” ” ” ” ‘ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس ایس میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں میں منظور منظور منظور منظور منظور منظور منظور منظور منظور منظور بھی بھی بھی بھی بھی بھی بھی بھی بھی بھی بھی بھی بھی بھی بھی بھی بھی بھیچچ ہے ہے ہے۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔چچ ۔چ ۔چچچچ ۔چچچچچ

اس اہم اور غیرمعمولی اعلان سورج نے 31 ستاروں کی سمت سے لوگوں کو ریڈیو سگنلز کو کھنگالنے ، اور ان میں سے ‘غیر فطری’ (غیر فطری) محسوس کیا کہ ان لوگوں نے سگنلوں کو مزید تلاش کیا اور محتاط تجزیہ کرنے کے بعد۔ ہے۔

اگر یہ سارے ستارے والے سورج ہیں تو ہم ان کا فاصلہ 327 نوری سال لے کر 10407 نوری سال تک پہنچ جاتے ہیں۔ (نوری سال یا ” لائٹ ایئر ” سے مراد وہ فاصلہ ہے جو روشنی میں ایک سال میں تین لاکھ کلومیٹر فی سیکنڈ کی رفتار سے طے شدہ ہے۔)

صاف ستھری بات یہ ہے کہ کسی جگہ پر ‘زندگی’ بھی نہیں ہے ، لیکن ماہرین کا مفہوم یہ ہے کہ اس طرح کے لوگوں کی زندگی میں بھی لاکھوں لوگوں کی زندگی ہے۔ موجود ہوسکتی ہے۔

حال ہی میں ان لایاؤں محتاط ترین انداز کے مطابق ، سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ وہ کہتے ہیں کہ کم سے کم 36 سیارے ہم انسانوں کو جیسی ” ذہین اور ترقی والے ہفتے کے دن ” ہسکتی ہیں کسی بھی طرح کی ترقی نہیں ہو رہی ہے اس نے ریڈیائی اشوڈس (ریڈیو سگنلز) کے رابطوں کے قابل ہوچکی ہوں۔

فطرت سے چلنے والے ریڈیو سگنل ایک مخصوص اور خود کو روکنے کے انداز سے منسلک ہوتے ہیں جن کی مصنوعی جگہ (یعنی انسان یا کسی اور ترقی یافتہ واقعہ) کی ‘غیر قدرتی’ کی سرگرمی کی دکانوں پر آنے والے ریڈیو سگنل سے ہوتی ہے۔ بہت مختلف ہیں۔

اس بات کا مطلب یہ ہے کہ اگر کوئی دُور خلائی جگہ موجود نہیں ہے تو اس میں سورج کی سمت موجود نہیں ہے لیکن کوئی غیر فطری ریڈیو سگنل نہیں تجزیہ ہوتا ہے جو آسانی سے معلوم ہوتا ہے کہ سورج کا دائرہ کسی سیارے پر موجود نہیں ہے۔ کی سرگرمیوں کی دکانوں سے اس ریڈیو سگنل کو خارج کیا جاتا ہے۔

ٹھیک اسی طرح ہم بھی کسی دُور دراز سیارے کی ترقی کی بات کر رہے ہیں اور یہ بھی دیکھتے ہیں کہ ‘غیر قدرتی’ ‘ریڈیو سگنلز جنیڈ ماہرین’ ‘ٹیکنو سگنیچرز’ ‘(تکنیکی دستخط ) کا نام دیا ہے۔

” گرین بینک آبروزرویٹری ” دنیا کی طاقتور ترین ریڈیو دوربینوں میں شمار ہوتا ہے۔ ماہرین نے 2018 اور 2019 میں اس دوربین کی جگہ سے لے کر آنے والے افراد کو ریڈیو سگنلز ریکارڈ کیا ہے اور مختلف جدید تکنیکوں کے بارے میں ان کا جائزہ لیا ہے جس میں قدرتی اور ممکنہ طور پر غیر قدرتی سگنل الگ الگ جاسکیاں ہیں۔

اس دوران سورج کی 31 ستاریوں کی طرف سے 26،631،913 ریڈیو اشاروں (سگنلز) کو ” امیدواروں ” کی حیثیت سے اس کے نشان زد کو مزید تجزیئے کرنے والوں کو الگ الگ جانا پڑا۔

مزید معلومات اور محتاط تجزیہ 4539 ریڈیو سگنل کے بارے میں بھی معلوم ہوسکتی ہیں جو ‘ٹیکنو سگنیچرز’ ‘کی شرائط پر واقع ہیں۔ 99.73 فیصد سگنلز میں سے ایک سال تک جاری رہنے والی نظر آتی ہے۔ ” درست طور پر شناخت کے وقت تکنو سگنیچرز ” قرار پایا۔

یہ بلاشبہ آپ کی نوعیت کی غیر معمولی اعلان ہے اور یہ توقع کی جاسکتی ہے کہ واقعی میں واقع خل والے دنوں والے دنوں دنوں دنوں دنوں دنوں دنوں دنوں دنوں دنوں دنوں دنوں دنوں دنوں خل خل خل خل خل خل خل خل خل خل خل خل خل خل خل خل خل خل خل خل خل خل خلائی خل خلائی خل خلائیائیائیائیائیائیائیائی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی نئی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

نوٹ: اس خبر کی تیاری میں ” سائنس الرٹ ” پر شائع ہونے والی تازہ ترین خبر بھی مدد لی ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here