کینیڈا میں انگوروں کے باغ میں تاریخ کی سب سے بڑی چوری کی واردات ہے۔  فوٹو: فائل

کینیڈا میں انگوروں کے باغ میں تاریخ کی سب سے بڑی چوری کی واردات ہے۔ فوٹو: فائل

کینیڈا: کینیڈا میں انگور کو براہ راست راستوں سے چرانے کی عجیب وغریب واردات ہیں جس میں نصف ٹن یعنی 500 کلوگرام سے بڑی وزنی انگور چرواہ ہیں۔

صوبہ کوبیک میں یہ انوکھی واردات ہے جہاں پکے ہوئے انگوٹی خوش ہیں۔ مالک کے مطابق اس انگور بازار میں فروخت بالکل تیار ہے۔ واقعے کے عبد پولیس سے رابطہ کیا آپ نے تفتیش شروع کردی لیکن اب تک چوروں کا کوئی سراغ نہیں مل سکا۔

پولیس مختلف پہلوؤں سے آگاہ ہے جو ایک باقاعدہ پیش کش کی بات ہے یا پھر شوقیہ کی طرف سے کسی کو مہم چلانے کی ضرورت نہیں ہے۔ پولیس کے مطابق اس باغ میں جتنے انگور آئے تھے وہ چرچلے ہوئے ہیں۔

باغ کے مالک مائیکل رابرٹ کے بارے میں بتایا کہ چھ ماہ تک کا فصل بھرپور خیال تھا۔ پانی کے معیار کی وجہ سے پانی صاف ہوگیا اور گھاس پھوس کو صاف کیا گیا۔ جب فصل کاشت کی باری آئی تو انگور چوری سے مل گیا۔

واضح طور پر اعلی درجے کے انگوروں کے پیٹر کوٹ جالیوں سے دھانپا گئے تھے۔ لیکن چوروں نے پہلے والیوں کو صاف کیا اور اس کے بعد انگوروں کو کوٹ لے گئے۔ وائٹ بلانک نامی نسلوں کی انگریزی بہت معیاری ہے اور کینیڈا میں اعلی درجے کی شراب بھی بنائی ہوتی ہے۔

پولیس کے مطابق چور ٹرالی والی گاڑی لائے جو ہر سطح پر چلتی ہے۔ ایک بڑی عمر کے افراد جلدی جلدی انگور کی حالت میں تھے اور جلدی جلدی جلدی نکل جاتے تھے۔ پولیس کا کسی شک کا اظہار کیا باغیچے کے اندر کسی شخص کا مخاطب لوٹا ہو گیا تھا کیونکہ اس باغ میں دوردراز جگہ کا انتخاب کیا گیا ہے؟

واضح رہے کہ اس سے پہلے کوبیک میں ہی مائل شربت چرایا گیا تھا جو میپل درخت کی شیرے سے چلا گیا تھا۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here