چلی کے صدر پر ساڑھے تین ہزار ڈالر جرمانہ ادا کیا گیا، فوٹو : فائل

چلی کے صدر پر ساڑھے تین ہزار ڈالر جرمانہ ادا کیا گیا، فوٹو : فائل

سینٹیاگو: چلی کے صدر سبستیان پنیرا پر ایک اجنبی خاتون کے ساتھ ساحل سمندر پر بغیر ماسک لگائے سیلفی لینے پر 3 ہزار 500 ڈالر جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق چلی کے صدر سبستیان پنیرا کی ایک ایسی تصویر وائرل ہوئی ہے جس میں ایک اجنبی خاتون ان کے ساتھ سیلفی لے رہی ہیں تاہم اس تصویر نے پورے ملک میں کہرام مچادیا ہے۔

خاتون کے ساتھ تصویر میں چلی کے صدر نے ماسک نہیں پہنا ہوتا ہے اور چوں کہ ملک میں کورونا احتیاطوں کے حوالے سے سخت قوانین وضع کیے گئے ہیں جن کی خلاف ورزی پر جیل بھی جانا پڑسکتا ہے اس لیے سوشل میڈٖیا صارفین نے قانون توڑنے پر صدر پر خوب تنقید کی۔

چلی پولیس نے عوامی مقام پر ماسک نہ لگانے پر صدر سبستیان پنیرا پر 3 ہزار 500 ڈالر کا جرمانہ عائد کیا ہے باوجود اس کے کہ صدر نے قوم سے معافی مانگتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ وہ واک کر رہے تھے کہ اچانک ایک اجنبی خاتون نے آکر سیلفی لینے کو کہا اور انہیں خیال نہیں رہا کہ وہ ماسک نہیں لگائے ہوئے ہیں۔

واضح رہے کہ چلی میں کورونا وائرس سے 5 لاکھ 81 ہزار سے تجاوز کرگئی ہے جب کہ اس مہلک وائرس سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 16 ہزار سے زیادہ ہوگئی ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here