اوگرا نہیں پیٹرولیم مصنوعہ کی قیمتوں میں درد کی سمری ارسال ہے (فوٹو ، فائل)

اوگرا نہیں پیٹرولیم مصنوعہ کی قیمتوں میں درد کی سمری ارسال ہے (فوٹو ، فائل)

اسلام آباد: اوگرا نے وفاقی حکومت کو قیمتوں میں تکلیف دی ہے لیکن اس سے کوئی سیاسی صورت حال پیش آرہی ہے لیکن پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں معمولی کمی ممکن ہے۔

عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں کے تناظر میں آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں رڈوبدل کی سمری پیٹرولیم ڈیوژن کو ارسلال کر دی ہے جو آج (جمعہ) وزارت خزانہ کو بھجوئی ہے۔

پٹرولیم ڈوژن کی طرف سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی وجہ سے 16 اکتوبر کو پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ایک ہی پریشانی کا سامنا کرنا پڑا ہے ، حکومت کی سیاسی صورتحال اور عوامی رد عمل کی وجہ سے مہنگائی کی شرح میں کمی آئی ہے۔ قیمتوں میں کچھ کمی ہے جس کی وجہ سے پیٹرولیم لیوی میں کمی واقع ہوئی ہے لیکن حتمی وزارت کے خزانے سے مشاورتی انتخابات کی منظوری دی جارہی ہے۔

حکومت کا یہ کہنا ہے کہ اس وقت فی لیٹر ڈیزل 30 پیسے پر ہے ، جب کہ پٹرول پر 27 پیسہ پر پٹرولیم لیوی وصول کرتے ہیں اور تیل کی فی لیٹر 11 نمبر 43 پٹرولیم لیوی عائد کی جاسکتی ہے اور حکومت کو کوئی ریلیف نہیں ملتا ہے۔ میں کمی ہو گی البتہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں حتمی وزارت کی خزانہ وزیر اعظم کے مشاور ت اور منظوری سے رہیں۔



Source by [author_name]

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here