فیشن شو کے دوران ماڈل سنیتا مارشل کی پیش کشوں کا لباس ڈیزائن کے ڈیزائن کا صاف نقشہ ، انتظامیہ فرح طالب فوٹو میڈیا میڈیا

فیشن شو کے دوران ماڈل سنیتا مارشل کی پیش کشوں کا لباس ڈیزائن کے ڈیزائن کا صاف نقشہ ، انتظامیہ فرح طالب فوٹو میڈیا میڈیا

کراچی: حال ہی میں ان لوگوں نے برائڈل کٹیور ویک میں جہاں ڈیزائنرز دلفریب لباس توجہ کا مرکز بنے ہوئے تھے ، اس دوران فیشن شو کے دوران دو ڈیزائنرز کے درمیان ڈیزائنرز کے درمیان ڈیزائنز چوری کرنے کی بات کی جاتی تھی۔

برائیڈل کٹیور ویک تو اختتام پزیر ہوکا ہے جس میں مختلف ڈیزائنرز دیدہ زیب اور خوبصورت لباس کی توجہ کا مرکز ہیں۔

برائیڈل کٹیور ویک کے دوران جب ڈیزائنر حارث شکیل نے اپنایا خوبصورت کلیکشن ” گیت ” پیش کیا تو ملک کا ایک اور معروف ڈیزائنر فرح طالب عزیز نہیں تھا حارث شکیل ان کے ڈیزائنز چوری کرنے کا موقعہ تھا۔

فرح طالب عزیز کے فیشن شوز کے دوران ماڈل سنیتا مارشل کی پیش کش کے لباس کے ڈیزائن کے ڈیزائن کی واضح نقل ہے۔ اس نے ڈیزائنر حارث شکیل سے کچھ سوالات پوچھے جو اسکرین شاٹس میڈیا میڈیا پر وائرل ہورے ہیں۔

انتظامیہ نے ڈیزائنر حارث شکیل سے پوچھا کہ آپ خود کو ڈیزائنر متعدد ہیں تو نقل کرنے کے لئے اپنے ڈیزائنوں کا انتظام نہیں کریں گے؟ کیا آپ کو کوئی شرمندگی نہیں آتی جب آپ فرح طالب عزیز کے ڈیزائن کردہ لباس آن لائن آرڈر ہوتے ہیں اور ان کے ڈیزائنز کو اپناتے ہیں

ہمارے دو سال پرانے ڈیزائنز کو کاپی کرنے کے بارے میں کیا کہنا ہے؟ یہ آپ کی بارود کی بات ہے جب آپ خود کو شرمندہ تعبیر کرتے ہو؟

فرح طالب عزیز کی ٹیم کے ڈیزائنر حارث شکیل نے انھیں دو سال پرانے ڈیزائنز کاپی کیا ہے جو اس وقت برائینڈل کٹیور ویک میں اپنایا ہوا ڈیزائن پیش کیا ہے اور یہ پہلی بار ہوا نہیں ہے کہ اس کا کوئی انتظام نہیں کیا جاسکتا ہے۔ شکیل ان کے ڈیزائنز چوری کمرے ہیں۔

فرح طالب عزیز کی بیٹی اور برانڈ مینجر ملیحہ عزیز انسٹگرام پر لکھا ہمارا کام بہت زیادہ کاپی ہے لیکن عام طور پر ہم ہنگامہ نہیں رکھتے ہیں کیونکہ معروف ڈیزائنرز اکثر چھوٹے چھوٹے کام کرتے ہیں۔ یہ ہمیں مشتہر کرنے والی چیز ہے۔

بہرحال حارث شکیل نے ایک بار نہیں کہا کہ ہمارا کام کاپی کیا ہے۔ یہ سند ہے کہ بار بار اس نے اپنے ڈیزائنرز کو اپنائے رکھا ہے کہ اب اس نے کیٹریک واک کو پیش کیا ہے لیکن میڈیا کے بارے میں کچھ عرصے سے ہمارے ڈیزائنوں کی کاپی کی تصاویر نظر آرہی ہیں۔

دوسری طرح کے ڈیزائنر حارث شکیل نے ڈیزائنر فرح کے طالب علموں کو بے بنیاد منصوبے کے بارے میں یقین دلایا کہ فرح طالب کو اپنی آواز میں اس وقت کی اہمیت کا سامنا کرنا پڑا جب اس لباس کے سالانہ میڈیا پر تشخیص کی تھی۔ دونوں لباس بالکل ایک نہیں۔ یہ ایک دوسرے سے بہت مختلف ہیں۔ لباس کا باڈی کٹ ، آستینیں ، دوپٹہ اور گلے کا ڈیزائن بھی مختلف ہے۔ ہاں اس بات سے اتفاق ہوتا ہے کہ دونوں لباس کا رنگ ایک جیسا ہے لیکن یہ بہت عام کلر ہے جو اکثر دلہنوں کے لباس میں استعمال ہوتا ہے۔ اگر میں غلط نہیں ہوں تو اس کے لباس کا اسٹائل انگریزی ہے جب وہ میرے لباس کا ڈیزائن پشواز ہے۔ مجھے فرح طالب کا دعویٰ بے معنی ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here