پاکستانی کھلاڑیوں اور مینجمنٹ کے افراد سے تعلق رکھنے والے افراد کے کورونا وائرس میں مبتلا واقعہ کی سمجھ سے بالاتر اور اچھے شگون نہیں (فوٹو: فائل)

پاکستانی کھلاڑیوں اور مینجمنٹ کے افراد سے تعلق رکھنے والے افراد کے کورونا وائرس میں مبتلا واقعہ کی سمجھ سے بالاتر اور اچھے شگون نہیں (فوٹو: فائل)

کراچی: سابق قومی سلیکٹر اور سابقہ ​​امتحان بیٹسمین شعیب محمد نے کہا تھا کہ نیوزی لینڈ کو نیوزی لینڈ میں شکست دینا بہت مشکل ہے ، کوویڈ 19 کی وجہ سے اس کی وجہ سے امتحان ہوا تھا۔

نمائندہ ایکسپریس سے گفتگو کرتے ہوئے شعیب محمد نے کہا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے دنیا کے حالات بدل گئے ہیں ، کورونا کی وجہ سے کرکٹ بھی ذرا مختلف انداز سے کھیلوں میں جا رہی ہے ، نیوزی لینڈ کے دوران پاکستانی کھلاڑی اور مینجمنٹ کے افراد کا دورہ کرنا تھا وائرس میں مبتلا سرگرمیانا سمجھ سے بالاتر اور اچھگی شگون نہیں ، اگر کوئی مشکل نہ ہو تو ، نیوزی لینڈ کی ٹیم ہے جو پاکستان ٹیم میں شمولیت اختیار کرنا بھی خطرناک ہے۔

شعیب محمد نے کہا کہ وہ پاکستانی کرکٹرز اور مینجمنٹ کوٹ ہیں اس سے پہلے وہ احتیاط برتنی تھی ، امید ہے کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کا دورہ نیوزی لینڈ خوش اسلوبی کے ساتھ مکمل تھا۔

ایک سوال کے جواب میں سابق سلیکٹر شعیب محمد نے کہا کہ اس وقت پاکستان کرکٹ ٹیم کو حوصلہ افزائی اور اعتماد کی ضرورت ہے ، پی ایس ایس ایل فائیوٹیز کے پلے آف میچز میں پیشہ ور کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی کی گئی ہے۔

شعیب محمد نے مزید کہا کہ پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان ہر وقت ہمارا مقابلہ ہوتا ہے لیکن نیوزی لینڈ کو اس کی سرزمین پر ماتھے کا حصول مشکل ہوتا ہے ، اب کھلاڑیوں کا اعزاب کا تنازعہ ہوتا ہے ، نیوزی لینڈ کا مقابلہ پاکستان کرکٹ ٹیم میں ہوتا ہے۔ اچھ موقعہ موقع ہے ، ہمارے کھلاڑیوں کا مقابلہ مشترکہ ہوکر کھیلوں میں ہوتا ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here