'نیلی اڑن طشتری' کوٹ نہیں ، صرف میڈیا پر بھی میڈیا میڈیا موجود ہے۔  (فوٹو: فائل)

‘نیلی اڑن طشتری’ کوٹ نہیں ، صرف میڈیا پر بھی میڈیا میڈیا موجود ہے۔ (فوٹو: فائل)

ہوائی: امریکی ریاست ہوائی جزیرے اور آاہو میں ہالیکالا ایونیو کے علاقوں میں منگل کی رات کے بارے میں کچھ لوگوں نے بتایا کہ کچھ دیر بعد میں سمندر میں جا گری۔

لوگوں نے اس سے متاثرہ مقامی پولیس کو بھی مطلع کیا جس کی وجہ سے پولیس کو ہوا نہیں مل سکتی تھی۔ فیڈرل ایوی ایشن ایڈمنسٹریشن ” (ایف اے اے) سے بھی رابطہ کیا گیا تھا ، لیکن اس سے کوئی علاقہ نہیں تھا۔ طیارے کی موجودگی یا سمندر میں کوئی اطلاع نہیں ہے۔

میڈیا میڈیا کے بارے میں ‘نیلی اڑن طشتری’ کے عنوان سے شیئر کرائیں جو دیکھ رہے ہیں کہ انھوں نے خود کو وائرل کیا تھا اور ابھی تک وائرل ہیں۔
https://www.youtube.com/watch؟v=JcZdpjZplhA

روزانہ ایک نجی امریکی ٹی وی چینل ” اے بی سی 11 ” کے بارے میں ایک رپورٹ جاری ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ قریب قریب ایک ہفتہ گزرنے والا مقامی پولیس اور ایف آئی ہے۔ اڑتی نامعلوم چیزیں ” کے بارے میں لاعلمی ظاہر ہوتا ہے۔

یہ بلاگ بھی پڑھیں: کائناتی مہمان

واضح ہے کہ روزنامہ ہارورڈ یونیورسٹی میں طبیعیات اور کونیات (فزکس اینڈ کوسمولوجی) کے ماہر ” اوی لوئب ” کے ایک مضمون میں دعوی کیا تھا کہ اس کا قتل عام ہم سے رابطہ کرچکی ہے اور 2017 میں اس کا مظاہرہ کرنے والے پراسرار کائناتی مہمان المعروف ” اومواموا ” دراصل ایک خلائی جہاز تھی جو ہمارے نظام شمسی کا دورہ کرنے آئی تھی۔

بعد ازاں 2019 میں ایک اور دم دار ستارہ ” سی / 2019 کیو 4 (بوریسوف) ” مشاہدہ کیا گیا تھا جو سورج کے قریب پہنچ گیا تھا ، نظام شمسی سے باہر چلے گئے تھے۔ سائنسدانوں کا اس سے کوئی تعلق نہیں ہے لیکن ہمارا نظام شمسی بھی کسی جگہ سے نہیں آیا تھا۔

یہ خبر بھی پڑھیں: کیا یہ پراسرار دم دار ستارہ نظامِ شمسی باہر سے آیا ہے؟

اس کے بارے میں یہ بھی معلوم ہوتا ہے کہ اس کے بارے میں بھی کوئی تجزیہ نہیں ہوا تھا۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here