پروفیسر اولیگا سوکولوف نے قرآن کو قتل کرنے والے لاشوں کا اعتراف کیا تھا ، فوٹو: فائل

پروفیسر اولیگا سوکولوف نے قرآن کو قتل کرنے والے لاشوں کا اعتراف کیا تھا ، فوٹو: فائل

سینٹ پیٹر برگز: روس کے شہر آفاق سالہ 63 سالہ تاریخ ڈین اولیگا سوکولوف کو اپنے خوابوں سے تعبیر کیا گیا ہے اور ساتھی کوولی گولی مار کر ہلاک اور پھر لاش کے ٹکڑے ٹکڑے کر رہے ہیں اس جرم میں 12 سال قید کی سزا سنائی جارہی ہے۔

عالمی خبر رسالہ کے مطابق نیپولین کی جنگی مہمات کا مہر روسی تاریخ دان اولیگا سوکولوف نے قران اور ساتھی سے 24 سالہ انستاسیا یشجنکو کو گولی مارکر قتل اور لاشوں کو ٹکڑے کرنے کا اعتراف کیا تھا۔

عدالت میں روسی تاریخ کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ عالم اسلام میں بار بار سوال پوچھا گیا ہے کہ آپ کے پاس ایک بار پھر یہ سوال ہے کہ آپ کے پاس ایک بار پھر یہودیوں کے ٹکڑے ٹکڑے کر دیئے گئے ہیں گیا۔

رواں برس نومبر میں روسی تاریخ دان اولیگا سوکولوف نشے میں دھت ایک دریا میں پائے جاتے ہیں۔ ایک لڑکی کا کٹا ہوا بازو اور پستول برآمد ہوا۔ پولیس نے تاریخ کو کوٹ میں حراست لے لیا۔

واضح رہے کہ تین سال پہلے مقالہ کے ساتھ ہی یہ بات واضح ہوگئی تھی کہ اس نے نیپولین کے ساتھ ڈرامے کا ایک جوڑا بنادیا ہے جس میں وہ خود ہی نیپولین بن گیا ہے اور اس نے جوزفین کا نام نہیں لیا تھا۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here