فلوریڈا کے موسیقار پرنس مڈینیٹ نے اپنے ماموں کے ذہن سے الیکٹرک گٹار تیار کیا ہے۔  فوٹو: گٹارلڈ

فلوریڈا کے موسیقار پرنس مڈینیٹ نے اپنے ماموں کے ذہن سے الیکٹرک گٹار تیار کیا ہے۔ فوٹو: گٹارلڈ

فلوریڈا: اگرچہ پرنس مڈنیائٹ (جو کہ ایک فرضی نام ہے) اس جرات پردظاہی حلقوں نے اس پریس کا مؤثر واقعہ کیا ہے 20 سال قبل ہونے والے حادثات میں ہمیشہ ہمیشہ کے لئے عزیز فلپ دیا گیا تھا اور اس کی کرکی تھی تھی۔ تدریسی جدوجہد کے نتائج

اس کے بعد پریزن نے اپنے عزیز کا پنجر (رب کیج) اور پہاڑی اورکولادی کی ہڈی کے سارے ٹکڑے ٹکڑے کر دیئے اور ایک مضبوط گٹار کی شکل دی۔ اس کے بعد اس نے گٹار کا اگلا سرا ، والیوم نوبس ، تار اور برقی سرکٹ کوٹہ پر دیا اور یہاں تک کہ وہ ایک عملی الیکٹرک گٹار میں تبدیل ہوگئی۔ اس ضمن میں عملی گٹار کو کوڈویڈیو میں جاوا سند ہے۔

https://www.youtube.com/watch؟v=6xQD-MfOuQA

پرنس کا کوئی فلپ انکل ہی میوزک اور بالخصوص ہیوی میٹل میوزک کی طرح لے جا تھے۔ جب سبزیوں کے بارے میں کوئی بات نہیں ہے تو اس کا استعمال کیا ہوگا؟ کیا وہ دوبارہ دفنادیں؟ کیا مچان پر کاٹھ کبارڑ کے ساتھ رکھیں یا پھر کوکوئ اور مصرف سے بچیں۔

لیکن جب ان کی باقیات کالج میں تھی تو اس نے انکرم کو جانا تھا۔ اس کے بعد باقی چیزوں کو باقاعدہ طور پر اجازت دینے کے بعد دفاتر میں بہت زیادہ خرچہ آتا ہے اور آخرکار پرنس نے اس کی تیاریوں سے ایک تخلیقی رخ موڑ لیا اور اس سے گٹار بنالیا۔

اب 20 سال بعد اس کے والدین دنیا میں نہیں آسکتے ہیں۔ پہلے اس نے گٹار والے ماہرین سے رابطہ کیا کوئی کام صاف نہیں تھا۔

اس کے بعد پرسانوں نے خود کو کوشش کی اور دوسرے لوگوں کی مدد سے انسانوں کی مدد کی جا رہی ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here