سابق امریکی شوہر کا فوٹو فوٹو اسٹائل

سابقہ ​​شوہر کاٹنے والے فوٹو فوٹوائل اسٹائل

سابق اداکارہ اور میزبان وین ملک کے سابقہ ​​شوہر اسد خٹک نے وین ملک کو ان دونوں بچوں سے غیر قانونی قانونی طور پر متحدہ عرب امارات سے پاکستان منتقل کر کے 50 سال ہرجانے کا نوٹس لیا۔

اسدخٹک نے روزنامہ پریپروینا ملک پران کی چھوٹی غیرقانونی تعلیم سے متعلق پاکستان کو اسمگل کرنے کا دعویٰ کیا تھا جس نے ہر بات کی منصوبہ بندی کی تھی لیکن وقت آگیا اس شرمناک عورت کی اصلیت سب کے سامنے موجود ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ملک کے شوہر سے خلع کی تصدیق کیر .پ کریں

اسد خٹک ہی سلسلہ وارٹوٹ میں بہت سوچا لیکن اب صبر کا پیمانہ لبریز ہوچکا ، میری خاموشی کو بزدلی سمجھوتہ ہوگئی۔ مجھے امید ہے کہ ایک باپ کو انصاف کے حصے ہیں۔ جس طرح سے مجھے کوئی جواب نہیں دیا جارہا ہے۔ میں نے ملک کو 50 کروڑ ہرجاٹ کے نوٹس بھیجے ہیں۔

اسد خٹک نے کہا کہ یہ بڑے پیمانے پر لوگ ہیں اور علمی طور پر اس کی زبان بند کردی جاتی ہے۔ میں آج کے ذرائع ابلاغ کے توسط سے ہر ایک کی درخواست کرتا ہوں ، مجھے انصاف دلوائیں۔ مجھے چھوٹا لوٹا دیں۔

اسد خٹک نے مزید کہا کہ اس ملک کا سب سے طویل عرصہ گزر رہا ہے لیکن مجھے کچھ نہیں مل رہا ہے۔ تنگ آکرمج قانونی راستہ اپنانا بڑا اور دبئی کیس بھی میرے حق میں نہیں ہے ، لیکن فرارہوگور کے بارے میں یقین ہے
عربی امارات سے پاکستان بھیجیں دیئے گئے۔

میں دونوں امریکی امریکی ہوں۔ کسی ملک کو نہیں چاہیں گے لیکن مجھے صرف دبئی کی حکومت بھی چکومہ دے گی ، لیکن اب ان سب باتوں کا جواب دیں گے۔ دو امریکی شہریوں کی طرح دبئی سے پاکستان اسمگل شدہ ، پاکستانی حکومت نہیں ہے؟

اسد خٹک نے کہا کہ اس کی وجہ سے وہ میری زندگی میں ہی کھیل رہے ہیں۔ مجھے اور میری فیملی کو کوکڑیاں اور ہراساں کیا گیا ، میرا کیریئر ہو اور میرے ساتھ باہری زبان کا استعمال ہو۔ لیکن انسانوں کا سب سے بڑا اثاثہ اس کی اولاد ہے ، جن کی آنکھوں میں سے نور چھن ہیں۔

اس نے اپنے بچوں کی شناختی دستاویزات کی میڈیا کو بتایا کہ وہ ملک سے متعلق دعوے پر مبنی ہے جس کا نام ملک سے متعلق ہے۔ ۔ پاکستان میں منتقل ہونے والے امریکی شہریوں کو غیر قانونی قرار دیا گیا ہے۔

اس نے یہ بھی بتایا کہ ملک کا اصل نام زاہدہ ہی طلاق ہوچکی ہے لیکن اس نے عدالت سے اس بات کا بھی مطالبہ نہیں کیا کہ وہ اس کا باپ بھی ہے لیکن اس کو کوئی غیر قانونی قانون بھی نہیں ہے۔ ان کا پاسپورٹ کب اورکس نے کوشش کی۔ اسد خٹک نے ہر طرح کی سخت قانونی چارہ جوئی کا حق بخشا۔

دوسری بات یہ ہے کہ ملک میں سابقہ ​​شوہروں کو پھانسی دینے والے جوابات دیئے گئے تھے اور اس کی دیکھ بھال کرنے والے کاغذات کے بارے میں کا کہنا تھا کہ 25 ستمبر 2019 کو اس سرپرستی کے پاس اور دبئی میں بھی رہائشی کا حصہ موجود ہے۔ ہی سیٹکیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ ملک کی طرف سے دو سالوں سے پہلے دو سالوں سے متعلقہ دستاویزات ہیں جن میں 2018 میں طلاق واقعی تھی جس کی تصدیق انہوں نے 2018 میں کی تھی۔ دونوں دو ابرام اور امل جو آپ کے والدہ کے ساتھ رہتے ہیں۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here