عبدالکریم کرد پر 20 لاکھ کا انعام تھا ، 30 خودکش حملہ آوروں کو افغانستان سے مختلف اوقات میں پاکستان لایا ، میر ضیا لانگو (فوٹو: فائل)

عبدالکریم کرد پر 20 لاکھ کا انعام تھا ، 30 خودکش حملہ آوروں کو افغانستان سے مختلف اوقات میں پاکستان لایا ، میر ضیا لانگو (فوٹو: فائل)

مستونگ: سیکیورٹی فورسز مستونگ میں واقعات کے دوران تبادلہ ہوں 4 دہشت گردی گرد مارے جب دو اہلکار بھی زخمی ہوئے۔

سی ٹی ڈی کے ترجمان کے مطابق کاؤنٹر ٹیرامزم ڈیپارٹمنٹ اور حساس مقام مستونگ کے علاقوں میں واقع دہشت گردوں کے دہشت گردوں کا چھڑا محاصرہ جہاں پر حملہ اور ان کے درمیان واقعہ کا تبادلہ ہوا۔

سی ڈی ڈی کا کہنا ہے کہ سی ڈی ڈی اہلکار اور دہشت گردی کے حلقے مابین میں 4 دہشت گرد حلقے ہیں جب اس کے مقابلے میں 2 اہلکار زخمی بھی ہوئے ہیں ، دہشت گرد حلقوں کے قبضے سے خودکش جیکٹیں ، اسلحہ ، دھماکا خیز مواد اور بارودی مواد برآمد ہوا۔

صوبہ وزیر داخلہ میر ضیا لانگو نے سیکیورٹی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کی سب سے بڑی منصوبہ بندی کی جاتی ہے ، مستقل طور پر سر کی قیمت 20 لاکھ افراد طے کی جاتی ہے جس میں خودکش جیکٹس اور اسلحہ برآمد کیا گیا تھا۔ 30 سے ​​زیادہ خودکش حملہ آوروں کے مختلف واقعات میں افغانستان سے پاکستان لایا ، مستونگ میں ہمیشہ رہتا ہے

میر ضیا لانگو نے مزید کہا کہ پی ڈی ایم جلسے کے 4 ہزار سے بڑے اہلکار تعیناتی ہوں گے ، ہم درخواست کریں گے کہ پی ڈی ایم ایم جلسہ ہوں گی ، ہمیں مکمل سیکیورٹی فراہم کریں گے۔



Source by [author_name]

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here