گجرے نے ذہین روبوٹ کو پہلی مرتبہ کی جانچ کی ہے۔  فوٹو: بی بی سی

گجرے نے ذہین روبوٹ کو پہلی مرتبہ کی جانچ کی ہے۔ فوٹو: بی بی سی

کیلیفورنیا: گگو کی ذیلی کمپنی نے پہلی مرتبہ کی فصلیں اور پھل داروں کی غذائیت ، فصلوں کا معیار اور صحت کا جائزہ لینے کے لئے روبوٹ تیار کیا ہے۔ پروجیکٹ منرل کے نام سے روبوٹ نے پہلی مرتبہ فصلوں کا جائزہ بھی لیا۔

ان روبوٹ کے فصلوں کی دیکھ بھال کرنا اور بھگتنا پڑے گا اور لوگوں کی مدد کرنا چاہتے ہیں۔ روبوٹ کو کسی طرح کا راستہ نہیں ملتا ہے۔

اس دوران روبوٹ اور دیگر اقسام کے سینسر کھیت سے ڈیٹا بڑی مقدار میں رہتے ہیں۔ اس عمل میں وہ ایک پوزیشن میں تھا اور انفرادی کیفیت کو نوٹ کرنا تھا۔ یہ ایلفابیٹ ایکس کمپنی کا منصوبہ ہے جس کا مقصد دنیا سے غازی قلات کا خاتمہ کرنا ہے اور کسانوں کو ہر ممکن معاونت فراہم کرنا ہے۔

گگو ٹیم کا بیان ہے کہ اس وقت کا غذائی قلت کم ہونے والا درپیش ہے اور ماحول دوست دوست زراعت کی ضرورت کے مطابق واقعہ ہے اور اس میں ایک بہت اہم کردار ادا کیا گیا ہے۔ ریجن آلات میں کسانوں کی ضروریات پوری نہیں ہوتی ہیں۔

منصوبے سے ہر ایک اہم ماہر گرانٹ کے بارے میں بتایا گیا کہ ہر ایک کوٹھی دے رہے ہیں اجزا اور پوڈوں کے غازائیت کے بارے میں معلوم ہے اس طرح کسی فصل پر اثرانداز آنے والے موسمیاتی اور ماحولیاتی تجربہ کا جائزہ بھی لینا ممکن ہے۔

ان روبوٹ کی افادیت سے پہلے بھی ثابت ہوچکی ہے۔ کچھ برس قبل دوسری کمپنی کے تیارکردہ روبوٹ کیلیفورنیا میں اسٹرابری کے باغات کی جانچ پڑتال کرتے تھے۔ روبوٹ پھلوں کی تصاویر لیتا ہے اور ہر پھل کو شمار ہوتا ہے اس کے معیار کا جائزہ لیا جاتا ہے۔ دوسری گنجائش میں روبوٹ پیڑ کی بلندی ، پتا کا رقبہ اور پھل جسامت بھی نوٹ کریں۔ اس کے علاوہ خود مٹی کی خبر بھی لیتا رہتا ہے۔

پروجیکٹ منرل کا ڈیٹا مشین لرننگ کلاؤڈ پر چلجاتا ہے اور وہاں عام ڈیٹا کو قابل قدر قدر یا معلومات کی جانچ پڑتال میں بدلا جا دستاویز ہے۔ ایک کسان کے طور پر اگر فصلوں میں ایک دو فیصد بہت کچھ ہوتا ہے تو یہ بہت اچھ اثراتا مقام ہوتا ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here