ٹیم منیجمنٹ نے فخر زمان کا متبادل نہیں لیا (فوٹو: فائل)

ٹیم منیجمنٹ نہیں فخر زمان متبادل نہیں ہے (فوٹو: فائل)

لاہور: مایہ ناز قومی کرکٹر فخر زمان میں بخار کی علامات ظاہر ہوئیں ، جس کا دورہ نیوزی لینڈ سے قریب ہی گیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق بائیں ہاتھ کے اوپنر فخر زمان قومی اسکواڈ کے ہمراہ نیوزی لینڈ روانہ نہیں ہوں گے۔ اتوار کے روز فخر زمان کو بخار کی علامات ظاہر ہوئیں ، ٹیم ڈاکٹر کی متعدد مرتبہ چیک اپکارت فخر زمان بخار میں کمی نہیں آئی۔

ٹیم منیجمنٹ نے اس اسکواڈ میں شامل دیگر کھلاڑیوں اور اسپورٹ اسٹاف کی صحت اور حفاظت کی پیش کش کی ہے فخر زمان نیوزی لینڈ کے قومی اسکواڈ کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ 23 ​​نومبر کی صبح نیوزی لینڈ روہنا نہیں ہوگا اس کے ساتھ ٹیم منیجمنٹ بھی ہوگی۔ متبادل بھی نہیں ہے۔

بخار کی علامت ظاہر ہونے کے بعد فخر زمان کو مکمل طور پر آئسولیٹ چلا گیا۔ اس طرح سے پی سی بی کا ریکل پینل فخر زمان سے مسلسل رابطے میں ہے اور وہ صحت سے متعلق ہے یا اس سے رابطے میں ہے۔

یہ بھی پڑھیں: نیوزی لینڈ کیلیے نے اعلان کیا قومی اسکواڈ اور اسٹاف کے کورونا ٹیسٹ کلیئر

وزٹ نیوزی لینڈ کے اعلان کردہ قومی اسکواڈ میں شامل ٹیم ڈاکٹر اور پی سی سی بیکل پینل کے مشورے ڈاکٹر سہیل سلیم کا کہنا ہے کہ 21 نومبر کو اسکواڈ کے دیگر اراکین ہمراہ فخر زمان کے دوروں پر آئے تھے جن کی جانچ پڑتال کی رپورٹ بھی منفی آئی تھی لیکن 22 نومبر کو تیز بخار کی علامت ظاہر ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ فخر زمان میں بخار کی علامت ظاہر ہو رہی تھی اور اسی طرح اسکواڈ سے آئسولیٹ واقع ہوئی تھی ، فخرزمان سے مسلسل رابطے کیے گئے تھے ، لیکن اس اسکواڈ میں شامل دیگر افراد کی صحت اور حفاظت سے متعلق کوئی بات نہیں ہوئی۔

قومی اسکواڈ پیر کی صبح 3 بجے لاہور سے نیوزی لینڈ کے روانہ ہوجائیں۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here