چینی صدر کے بیان کے ساتھ امریکہ کے کشیدہ حالات میں (فوٹو ، فائل)

چینی صدر کے بیان کے ساتھ امریکہ کے کشیدہ حالات میں (فوٹو ، فائل)

بیجنگ: چینی صدر کو فوج کی پوری توجہ اور توانائی کے ساتھ جنگ ​​کی تیاری کا ہدایت کرنا ہے۔

چین کی سرکاری خبر رساں ایجنسی کا مقابلہ منگل کو ہانگ کانگ کی سرحد سے ملحقہ صوبہ گوان ڈونگ میں پیپلز لبریشن آرمی کے میرین کور کا معائنہ کرنے کے موقع پر صدر شی جن جن پنگ نے کہا تھا کہ چاق چوپند رہائش پذیر تھا ، اس نے خلوص اور وفاداری کے ساتھ جنگ ​​لڑی۔ ’’ اکثریت۔

امریکی خبروں کے نیٹ ورک سی این کے صدر شی جن پنگ کے گوان ڈونگ صوبے کے دورے کی اصل حقیقت 1980 میں پیشہ ور افراد کے مطابق چین کے معاشی علاقے کی چالیسویں سالگرہ میں موجود کمپنی تھی۔ چین کی دنیا کی دوسری بڑی معاشی قوت ہے جس میں اقتصادی سطح بنیادی ترجیح ہے۔

تاہم ، تائیوان کو ہتھیھی جماعتوں کی فروخت اور کورونا وائرس کے سباعتاث چین اور امریکہ کے مابین کشیدگی بلند ترین سطح پر پہنچنے والے چکی ہیں ، لیکن اس دور میں فوج کے دست راست معائنے کے موقع پر چینی صدر کی تقریر کو اہمیت دی گئی ہے۔

یہ خبر بھی پڑھیں: چین کو کوئی خطرہ نہیں ہے

واضح ہے کہ چین تائیوان کو اپنا حصہ بنا ہوا ہے اور اسی طرح کے امریکہ کے تعلقات بڑھ رہے ہیں۔

دوسری بات کا مطلب یہ نہیں ہے کہ صرف تائیوان کے اساتھ سفارتی اور اقتصادی مراسم شروع ہو رہے ہیں لیکن اس سے کچھ دن پہلے ہی جدید ہتھیار اور راکٹ اسٹسٹم حاصل کرنے کے تجزیوں میں پیش پیش ہے۔ جس پر رد عمل ظاہر ہوا ، چینی دفتر خارجہ امریکہ کو تائیوان کے ساتھ عسکری تعلقات استوار ہونے سے باجوڑ کی تنبیہ تھی۔

یہ خبر بھی پڑھیں: چین نے ایک ساتھ 5 جنگی مشقوں کا آغاز کیا

اس سے پہلے کے چینی صدر شی جن پنگ نے بھی ایک بیان میں واضح طور پر کہا تھا کہ تائیوان میں چینی حق تسلیم کرنا ہے کہ عسکری قوت کا استعمال ممکن نہیں ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here