ٹیم کو ان کی طرح جارحانہ انداز میں بیٹنگ کرنے والوں کو مزید کھلاڑیوں کی ضرورت ہوتی ہے ، بولنگ کوچ۔  فوٹو: فائل

ٹیم کو ان کی طرح جارحانہ انداز میں بیٹنگ کرنے والوں کو مزید کھلاڑیوں کی ضرورت ہوتی ہے ، بولنگ کوچ۔ فوٹو: فائل

کراچی: بولنگ کوچ وقار یونس کا کہنا ہے کہ شاہین شاہ آفریدی پہلی ٹیلنٹ ہے اور دورۂ آسٹریلیا کے بعد اس نے بہت کچھ سیکشن کیا تھا جب اس نے پہلے کہا تھا کہ مجھے شاہین کی بولنگ پرفخر ہے۔

راولپنڈی میں میڈیا سے گفتگو میں وقار یونس نے زمبابوے کیخلاف نوجوان بیٹسمین حیدر علی اور فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی پروگرام افتخار احمد کی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ، ٹیم دو میچ میں اچھے فارم میں نظر آئی۔

انہوں نے افتتاحی احمد کے کھیلوں کو کو شش کرتے ہوئے کہا کہ وہ بیٹنگ اور بولنگ دونوں میں مہارت کی جگہ ہے ، ٹیم کو 2 حملہ3 آل راؤنڈرز مل جانے کے لئے نہیں ہے۔

بولنگ کوچ نے شاہین شاہ آفریدی کی پہلی ٹیلنٹ ، دورۂ آسٹریلیا کے بعد بہت سکیورٹی ، اس کا بال پر اب پہلے سے زیادہ کنٹرول حاصل کیا تھا ، مجھے شاہین بولنگ پرفخر تھا۔

ایک سوال پر وقار یونس نے کہا کہ ہم تمام بولرز کو تمام فارمیٹ میں نہیں جان سکتے ہیں ، ٹیم مینجمنٹ ہر کھلاڑی کو اس کی صلاحیتوں کا اندازہ ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کونوجوان پیسرزکے ساتھ بیٹسمین کے ساتھ مل کر بھی شامل ہے ، حیدر علی بیٹنگ لائن میں کوئی اضافہ نہیں ہوا ، ٹیم کو کی طرح جارحانہ انداز میں بیٹنگ کرنے والے مزید نوجوان کھلاڑیوں کی ضرورت ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here