امریکی ماہرین نے 95 فیصد لائٹ پلٹانے والا ایک سفید پینٹ تیار کیا ہے۔  فوٹو: فائل

امریکی ماہرین نے 95 فیصد لائٹ پلٹانے والا ایک سفید پینٹ تیار کیا ہے۔ فوٹو: فائل

نیویارک: پینٹ اور صحت سے متعلق ماحولیات کا حصہ بننا ہے۔ اس سے پہلے ہم نے کرونا کاش پینٹ کا ذکر کیا تھا اور اس نے دنیا کی سب سے سفید رنگ کی پینٹ تیار کی تھی جو سورج کی روشنی میں 95 فیصد تک لوٹا کرمارتین کو ٹھنڈا تھا۔

پوردوا یونیورسٹی کے ماہرین نے انتہائی سفید پینٹ کا نام نہیں لیا جس کی وجہ سے بدترین عمارتوں کو ٹھنڈا رکھنا آسان ہو گیا تھا اور اس کے ایرکنڈیشننگ کا دورانیہ بھی کم سرگرمی تھا۔ اس طرح کا ماحول دشمن اور توانائی سے متعلق لوگوں کا ایئرکنڈیشننگ نظام پرانحصار کچھ کم ہوسکے گا۔

یہ خبر بھی پڑھیں: عمارتوں کوٹھنڈا حفاظت والے ” سپر وائٹ ” رنگین تیار

اس سے پہلے یہ بھی نہیں تھا کہ اس سے پہلے بھی اس طرح پینٹ بنائے رہتے تھے جن میں اس نے کچھ لوگوں کو بتایا تھا کہ وہ اس سے زیادہ فائدہ اٹھاسکتے ہیں۔ لیکن اب پوردوا یونیورسٹی کے بعض ماہرین نے ٹیٹینیئم ڈائی آکسائیڈ کیلے کیلشیئم کاربونیٹ جیسی کم لمبے اور وسیع مقدار میں دستیاب معدن کو استعمال کیا ہے۔

کیلشیئم کاربونیٹ کی دوسری اہم بات یہ ہے کہ وہ بالائے بنفشی (الٹراوائلٹ) شعاعوں کو جذباتی کررہی ہے اور پینٹ میں مل میںی کا بہت فائدہ اٹھا رہی ہے۔ اس کے علاوہ پینٹ میں مختلف قسم کے لوگ شامل تھے جو بہت اچھی طرح سے دھوپ کو پلٹ عبادت کرتے ہیں۔

اس طرح پینٹ پر روشنی والی روشنی کی 95 فیصد مقدار لوٹ رہی ہے۔ جب ایک گھر میں باہر کی آزمائش ہوئی تھی تو روایتی پینٹ اس کے مقابلے میں دیوار یا چھت کوٹ سے دو سینٹی گریڈ تک پہنچے تھے۔ لیکن رات کے درجہ حرارت میں غیرمعمولی کمی نوٹ جاری۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here