دنیا بھر میں سفید فام عامہ نے سیاہ فاموں کی آواز بنائی ہے اور انسٹاگرام اکاؤنٹس کے کنٹرول سونپ دیے ہیں۔  فوٹو: فائل

دنیا بھر میں سفید فام عامہ نے سیاہ فاموں کی آواز بنائی ہے اور انسٹاگرام اکاؤنٹس کے کنٹرول سونپ دیے ہیں۔ فوٹو: فائل

واشنگٹن: دنیا بھر میں سفید فام عوام نے سیاہ فام افراد کی حمایت کی جس کا انسٹا گرام اکاؤنٹس ہم نے پلہ وار سیاہ فام لوگوں کے ساتھ حملہ کیا۔ یہ اکاؤنٹس کم ازکم ایک ماہ تک خدا کی تعداد میں اکثریت گزر جاتی ہے اور وہ اس پوسٹ پر جانے کے لئے جاتے ہیں۔

یہ قدم برطانیہ سے شروع ہوا جس کا نام ‘یوک بلیک ہسٹری منتھ’ گیا ہے جو مائک یوکے نام کی تنظیم میں شروع ہوئی ہے۔ اس کی بدولت سیاہ فام عوام کی زندگی ، زندگی اور سیاحت کوٹ لوگوں کے سامنے پیش ہونا ضروری ہے۔ اس ضمن میں 70 میں سے بڑی سفید فام نے اپنے اکاؤنٹس میں سیاہ فام کی تعداد میں عام لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ واضح رہے کہ تمام 70 فیصد خواتین سے متعلقہ فلم ، ذی ذرائع ابلاغ ، تحریر اور شوبز کی پوری دنیا میں اور مجموعی طور پر 17 کروڑ 50 لاکھ افراد انسٹاگرام پر پڑھ رہے ہیں۔

سی این این ممتاز صحافی کرسمس امان پور کا اکاؤنٹ بکر پرائز لیٹری برنرڈائن ایواراسٹو پاس آیا ہے۔ براڈکاسٹر جون سرپونگ وکٹوریا گلوکارہ اور فیشن ڈیزائنر وکٹوریا بیکھم کا اکاؤنٹ استعمال کریں گے جن کی فالوور کی تعداد دو لاکھ 87 ہزار افراد ہے۔ ایما ڈٰیبری گوینث پیلٹرو کا اکاؤنٹ استعمال کریں۔

دوسری بار خواتین کے فیشن کی پریشانی کی کینیا ہنٹ ایلیکسا چیونگ کا اکاؤنٹ سنبھالیں گیٹ۔ یہ ساری مہم کا راستہ ہے ، یہ بھی کسی طرح کا سیاہ فام لوگوں کی آواز ، مسائل اور رہائشی کوڈ کے سامنے ہے۔ یوک مائک کے مطابق اب وقت آگیا ہے کہ سیاہ فام میں عام طور پر معاملات کو بڑھا کر دکھایا جاسکتا ہے۔

اس مہم میں # شیئر theMicUK اور #ShareTheMicNow کے ہیش ٹیگ کا استعمال ہوتا ہے۔ یہ قدم ووگ میگزین اشاعتی مینیجر وینیسا کنگوری اور ان کے ساتھیوں کے ایم اے پر شروع کیا ہوا ہے۔ اب اس مہم میں تازہ کمپنی کا فلم اسٹار جولیا رابرٹس جاری ہے۔

تجزیہ کاروں نے نسل پرستی کو ختم کرنے کا ایک اہم اقدام قرار دیا ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here