سعودی عرب میں انسداد بدعنوانیوں کے واقعات نزاہاہی نے حتمی کارروائی کا فیصلہ کیا اور فیصلے جاری رہے (فوٹو ، فائل)

سعودی عرب میں انسداد بدعنوانیوں کے واقعات نزاہاہی نے حتمی کارروائی کا فیصلہ کیا اور فیصلے جاری رہے (فوٹو ، فائل)

ریاض: سعودی عرب میں بڑے پیمانے پر کریک ڈاؤن شروع ہوا ، جس میں متعدد شہری اور سرکاری افسران کے مقدمات درج تھے۔

عرب خبر رساں ادارے کے مطابق سعودی عرب کی ملکیت کی گرفتاری اتھارٹی (نزاہاہ) انہوں نے رشوت ستانی ، غبن اور عوامی مالی وسائل کی خورد برد کے مقدمات درج کرلی ہیں اور ان معاملات میں پندرہ معاملات بھی سامنے آئے ہیں۔

نزاہی نے جاری کردہ بیانات کے مطابق وزارت دفاع کے ایک افسر کو 5 سال کی قید اور جرم کی سزا دی گئی ہے اور غبن کی تمام رقم قومی خزانے میں جمعہ کو ہدایت کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ ایک اور ریٹائرڈ افسر کو بدعنوانی کے جرم میں تین برس کی سزا سنائی ہوئی ہے۔

وزارت ہاؤسنگ کے مطابق منی لانڈرنگ اور رشوت ستانی ثابت ہونے پر پندرہ افسران اور اہل کارن دو دس سال تک قید کی شادی پر مبنی ہیں اور ان کی جائیدادیں ضبط کرلی ہیں۔

اتھارٹہی کی وزارت داخلہ میں بھی رشوت ستانی کے مرتکب افراد کو پانچ سال تک سزائے موت سنائی جاری ہے۔ اسی طرح کی وزارت صحت سے متعلق متعدد ڈاکٹروں کے بھی اختیارات غلط ہیں اور رشوت لینے کے بعد اس کے بعد ہونے والی کارروائی کے بعد جنوری میں ڈاکٹروں کو بھی شامل کیا گیا ہے۔

ملک کی انتظامیہ بد نظمی اور بد عنوانی کے خاتمے کے لئے بڑے پیمانے پر کریک ڈااؤںن ہوگئی۔ اس کارروائی کے مکمل تعاون کی فراہمی کو جاری رکھنے والے سعودی فرماں روایت سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد محمد بن سلمان کا بھی شکریہ ادا کیا گیا ہے۔

نمایاں مقدمات

سعودی عرب کی وزارت صحت کی 24 ، ماحولیاتی تحفظ کی 15 ، ماحولیاتی انتظامیہ کی 14 ، دو یونیورسٹی اساتذہ اور طبی فضلے کے بارے میں 16 سالہ ملازمین کے خلاف کاروائی جاری ہے۔

ججوں کی کارروائی بھی

اینٹی کرپشن اتھارٹی کی کارروائی عدلیہ بھی محفوظ نہیں رہی اور حکم نامہ جاری نہیں رہا ، عوض پرُتعیش گاڑی کی رشوت قبول کرنے والے لوگوں کو بھی دھر لیا گیا۔ اس جج کے تین فیصلوں میں ایک ملزم کی رہائش ممکن تھی۔

انجیکشن کی غیر قانونی خریداری

اس طرح کی 12 ہزار ریال کی طرف سے وزارت عظمیٰ کے دفاع میں ہارمونز بڑھنے والے افراد کے لئے انجینئرنگ اسٹوریج کا معاملہ طے کیا گیا ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here