اس سال موبائل گیمنگ میں آمدنی کا واقعہ پب جی سرِ لسٹ گیم قرار دیا گیا ہے۔  فوٹو: فائل

اس سال موبائل گیمنگ میں آمدنی کا واقعہ پب جی سرِ لسٹ گیم قرار دیا گیا ہے۔ فوٹو: فائل

بیجنگ: سال 2020 میں پانچ ماہ کے بارے میں کہنا ہے کہ 12 ماہ میں مجموعی طور پر پندرہ ارب ڈالر سے زیادہ رقم کم تھی۔

یہ سال کورونا وبا اور لاک ڈاؤن کی وجہ سے پندرہ ممالک میں صرف مکانات تک محدود نہیں ہے اور انٹرنیٹ سے منسلک بھی ہے۔ اس سال موبائل کی مقبولیت میں غیرمعمولی اضافہ ہوا۔ ایک تنظیم سینسر ٹاور اعدادوشمار جاری ہے کہ اس نے پانچ موبائل سے زیادہ منافع حاصل کیا ہے۔

اس فہرست میں اچھی طرح سے یا بریکٹ شہر والا ایک جیب پہلے نمبر پر ہے جس کی مجموعی طور پر 2.6 بلین ڈالر کم ہے۔ اسطرح مقبول آن لائن ملٹی پلیئر گیم اعزاز پبی جی کو کوشاں ہے جو اس سال غیرمعمولی طور پر مقبول ہوا ہے۔ ایک انداز کے مطابق 2019 کے مقابلے میں پب جی کی آمدنی میں 64.3 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

واضح رہے کہ ایک جنوری کو ہندوستان پابندی عائد کرچکا ہے۔ پاکستان نے بھی اس کھیل پر عارضی پابندی عائد کی تھی لیکن اس کے بعد ازاں پی ٹی نے اس کو ختم کردیا تھا۔

دوسری نمبر پر ٹینسنٹ کمپنی کا تیارکردہ آن آف آف کنگز گیم ہے جس میں سال کے دوران 42.8 فیصد اضافی کے ساتھ ڈھائی ارب ڈالر کی رقم کمائی ہے۔

تیسرے نمبر پر پوکے مون پر ہے جس نے 1.2 ارب ڈالر کا منافع حاصل کیا ہے۔ چوتھ نمبر پر مون آٹو کمپنی کے کوئن ماسٹر میں پانچ نمبر ہیں روبلوکس گیم اور چھٹی نمبر پر مونسٹر اسٹرائک شامل ہیں۔

ماہرین کی توقع یہ ہے کہ اس کا سال بھی مقبولیت کا مظاہرہ کرتا ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here