جارجیا انسٹٰی ٹیوٹ کی ماہر نے کھلونا روبوٹ کے مشورے کرنے کا تجربہ کیا ہے۔  فوٹو: نیوسائنٹسٹ

جارجیا انسٹٰی ٹیوٹ کی ماہر نے کھلونا روبوٹ کے مشورے کرنے کا تجربہ کیا ہے۔ فوٹو: نیوسائنٹسٹ

جارجیا: تجریدی آرٹ کے مصور کے کینوس پر اندھا دھند رنگ بکھیرکر فن پارے تخلیق ہیں۔ اب ایک خاتون سائنسدان چھوٹے روبوٹ سے کینوس پر مصوری تخلیقی کام کرنے والی ہیں۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ اس روبوٹ کو مصور قابو نے اپنی پسند کے ڈیزائن بھی بنائے ہیں۔

جارجیا انسٹی ٹیوٹ آف ماریہ سانتوس نے ایک اسٹسٹم بنایا ہے جس کا استعمال دوسرے فن کاروں نے بھی کیا ہے۔ اس میں کمپیوٹر کینوس کا علاقہ منتخب روبوٹ کو روکنے کا طریقہ ہے۔ ہرروبوٹ پر آپ کی پسندیدگی کا رنگ محکمہ جا سند ہے۔ کیا کچھ روبوٹ آگے بڑھتا ہے اور یوں کینوس پر رنگین بکھرتے راستے ہیں۔ اس طرح سے ایک ساتھ 12 روبوٹ فن پارے تخلیق کاروں سے بہت تیزی سے ہیں۔

ماریہ سانتوس کا کہنا ہے کہ ہم نے اس کی طرح کاشتکاری سے مصور کی رنگینوں کو تھالی کو بڑھا دیا ہے۔ ایک قدیم روبوٹ مل کر انسانی مصور کے استعداد کو بڑھتے ہوئے عبادتیں۔ اس طرح روبوٹ اور کمپیوٹر سے عمدہ تخلیقات کی جاکتی ہیں۔

کسی بھی روبوٹ پر رنگ نہیں ڈالا جاتا ہے لیکن وہ خود بھی بنیادی طور پر رنگ بھرتا ہے ، اس میں نیلا ، پیلا اور بنفشی رنگ شامل ہیں۔ ان کے ملاپ سے مزید شیڈ اور رنگین بن سکتے ہیں۔ ماریہ کے مطابق تینوں روبوٹ ملک میں کام کرنے والے بہت سارے ہیں اور رنگ ضائع نہیں ہیں۔ اس عمل میں ایک روبوٹ دوسرے سے رابطے میں بھی رہتا ہے۔

https://www.youtube.com/watch؟v=BphBnisGWT0

اس سسٹم کوبوٹ نے اپنے رنگوں کا انتخاب نہیں کیا ، خود کو خود آرٹسٹ منتخب کیا ہے۔ اس طرح روبوٹ چلنے کا راستہ بھی مصور طے کرتے ہیں۔ اس طرح جو کچھ مصور کے دماغ میں ہوتا ہے وہ روبوٹ پر کام کرتا ہے اور حسب مینیش فن پارہ تخلیق کیا جاسوس ہوتا ہے؟

اس عمل میں سبھی مشکل کام روبوٹ میں پینٹ بھرنا تھا۔ لیکن مائیک پینٹ کو فوری طور پر خاک کرنا تھا۔ یہ روبوٹ پہلوؤں کی دکانوں پر چل رہا ہے اور پینٹ خشک نہیں ہوسکتا ہے اس کی تکمیل کینوس گندا ہے اس کا ایک حل یہ ہے کہ چھوٹے ڈرون سے رنگین پھینکیں۔ تاہم اس میں کچھ خاص تبدیلیاں ہو رہی ہیں۔

ویڈیو میں اس طرح کا طریقہ بتایا گیا ہے کہ روبوٹ دھیرے دھونے کے لئے خود کو ڈیزائن بناتے ہیں اور ہر روبوٹ پر ایک برش کا رنگ ہوتا ہے جو کینوس پر بکھیرتا رہتا ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here