کرکٹ کے مداح گھروں پربیٹھ کرکر نے بہتر مشورے کی امید ، بابراعظم

کرکٹ کے مداح گھروں پربیٹھ کرکر نے بہتر مشورے کی امید ، بابراعظم

لاہور: قومی کپتان بابر اعظم نے بتایا کہ منگل سے جنوبی افریقہ کے جنوبی علاقوں میں ہونے والے پہلے مرحلے کے بارے میں منصوبہ بندی کی تحقیقات جاری ہیں۔

بابراعظم نے ورچوئیل پریس کانفرنس میں کہا کہ کراچی کے دورے مکمل طور پر ہو رہے ہیں ، پلیئینگ الیون میں ان کی تشکیل دینی ہے ، کھلاڑیوں کے انتخاب میں ہیڈ کوچ کی جانب سے مشورتی کارکنوں کو ، ٹیموں کی طرف سے حتمی سے ملاقات کی گئی تھی۔ انہوں نے کہا کہ کراچی کے مختلف علاقوں میں مکمل منصوبہ تیار کیا گیا ہے ، پاکستان ٹیم کا دارومدار صرف اور صرف تجربہ کرنے والا ، دیگر کھلاڑیوں کا کردار بھی بہت بڑا ہے ، اظہر علی ، محمد رضوان اور فوڈ عالم نے پوری دنیا میں بیٹھے میری کارکی کھلاڑیوں کی بھی بہتر وجہ ہے ، فیلڈ میں کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی ضروری ہے ، ان کے ساتھ کھلاڑیوں کو جارحیت کی بھی ضرورت نہیں ہے۔

بابراعظم نے روایتی طور پر کراچی میں روایتی طور پر ، قومی اسٹیڈیم کی وکٹ روایتی مثال کے طور پر ، وکٹ کو دیکھتے ہوئے کر پلان تیار کیا ہوا تھا ، اس موقع پر کہا گیا تھا کہ وہ پہلے بیٹنگ کرین ہے یا فیلڈنگ کو ترجیح دیں۔ ہر کھلاڑی کا اپنا پلان بنایا ہوا ہے ، ٹیم پلانٹ بھی کھیلوں کا حصہ بنتی ہے ، ڈومیسٹک کرکٹ میں بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے کھلاڑیوں کے سیکنڈ مواصلات ہوتے ہیں ، کھلاڑیوں کو ٹیم میں شامل نہیں کیا جاتا ہے۔ کھلاڑیوں کو بہت پریشانی ہوئی ہے اور اچھ اچی اسپنرز اور بیٹسمین موجود ہیں ، باصلاحیت کھلاڑیوں کا مقابلہ جاری رکھنی ہوتا ہے ، مستقبل میں پاکستان کی ٹیموں کا مقابلہ ہوتا ہے ، ہم تماشائین کے قریب ہوتے رہتے ہیں۔ مسٹر ہیں۔ تماشائی بھی گراؤنڈ میں موجود ہیں۔

کرکٹ کے مداح گھروں پربیٹ کرک سے بہتر مشقوں کی امید ہے ، امید ہے کہ کرکٹ کے مداح قومی ٹیم کے حوصلہ افزائی کریں گے ، محمد حفیظ کے سوالات کے جوابات کے بعد ، اس کے بعد ان کا مقابلہ کیا جائے گا ، بٹور کپتان پہلا میچ ہے۔ بہت خوشی ہے ، مجھ پر کسی قسم کی دباؤ نہیں ہے ، چھوٹی معاونت کی ٹیم نہیں بنائی جاسکتی ہے ، خوشی ہوگی تو جیت جائے گی ، خرابی ہوگی ، ہم خوش آئند بات کریں گے جو بڑی ٹیم کا مقابلہ ہے۔ پریشانیوں میں پورے بندرگاہ کی کوشش کی جارہی ہے ، جنوبی افریقہ کے نتائج ریکارڈ ہونے میں خرابی پیدا ہو رہی ہے لیکن اس سے کچھ سوچنا ہی نہیں ہے ، انجری کے سبب نیوزی لینڈ میں بدقسمتی نہیں ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here