ملزم ناصر سے 2014 ء میں نکاح ہوا ، کاروبار کے سلسلے میں 8 لاکھ لوگوں کا غائب ہونا ، متاثرہ عورت (فوٹو: فائل)

ملزم ناصر سے 2014 ء میں نکاح ہوا ، کاروبار کے سلسلے میں 8 لاکھ لوگوں کا غائب ہونا ، متاثرہ عورت (فوٹو: فائل)

کراچی: کراچی کے علاقے اورنگی ٹاؤن میں جعلی شادیاں کرنے والے ملزم پکڑے گئے احاطہ عدالت میں انھیں تھپڑ دے مارا۔

کراچی سٹی عدالت میں جوڈیشل مجسٹریٹ غربی کے روبرو دھوکا دہی اور فریڈ سے متعدد افراد میں شامل شادیاں کرنے کے معاملے میں غلط ملزم کو پیش کیا گیا۔ ملزم کی تھپڑ جڑ گئی۔

متاثرہ خواتین کی ملزم ناصر کے ساتھ 2014 ء میں نکاح ہوا۔ ملزم کاروبار کے سلسلے میں تعطیلات سے 8 لاکھوں کم غائب مقام۔ ملزم نہیں جعلی نکاح نامہ بنوا کر مجھ سے دھوکا دہی ، ملزم نے جعلی شادیاں کرنے کی کوشش کی تھی ، لیکن ملزم ناصر اس طرح لمبی لمبی زندگی کی خرابی کا نشانہ بنا ہوا ہے۔

متاثرہ خواتین کے وکیل غلام عباس نے موقف اختیار کیا کہ ملزم کا اصل نام عبد الماجد ہے جو نام بدل رہا ہے۔ ملزم کے آخری مقدمات درج ہونے کے بعد مزید دو پولیس اہلکار بھی شامل نہیں ہیں۔ عدالت نے ملزم کو 14 روزہ عدالتی ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔ عدالت نے پولیس کو ملزم کے خلاف چالان جمعہ کو حکم دیا تھا جب ملزم کے مقدمے کی سماعت پیر آباد میں واقع ہوئی تھی۔



Source by [author_name]

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here