اس ٹیسٹ میں صرف 80 منٹ میں نتائج ہوتے ہیں ، فوٹو: جاپان ٹائمز

اس ٹیسٹ میں صرف 80 منٹ میں نتائج ہوتے ہیں ، فوٹو: جاپان ٹائمز

ٹوکیو: جاپان کی کمپنی کاواساکی نے اسے روبوٹ تیار کرنے کا دعویٰ کیا ہے جو مریضوں کی ناکامی اور حلقے سے نمونے لینے والا ہے اور صرف 80 منٹ میں اس کا نتیجہ بھی ہے۔

امریکی نشریاتی جائداد کے مطابق جاپان میں اولمپک نے توریوں کے سلسلے میں کورونا سے بچاؤ کے بارے میں بھی کہا ہے کہ یہ بھی ایک قدم ہے جس کے تحت اسٹیڈیم میں لوگوں کو بھی شامل کیا گیا ہے۔

یہ روبوٹ جاپانی کمپنی کاواساکی تیار ہوئی ہے جب وہ جاپان کی صحت سے متعلق ہے اور روبوٹس کا معائنہ کیا ہے اور ماہرین سے جانچ پڑتال کی ہے۔ روبوٹ مصنوعی بازو کے مریضوں کی ناکامی اور دائرے سے نمونہ لیتا ہے اور صرف 80 منٹ کے اندر ہی نتیجہ ہوتا ہے۔

یہ سسٹم 16 گھنٹوں میں 2 ہزار نمونوں کے پراسیسنگ کر رہے ہیں۔ یہ سسٹم دو حصوں پر مشتمل ہے ، ایک مصنوعی بازو ہے جس کا تجربہ نمونے لیتا ہے اور دوسرا لیب ٹیکنیک مشین ہے جس میں امتحان لیا جاتا ہے۔

جاپانی وزیر صحت تامورا کا کہنا تھا کہ اولمپک کے دوران زیادہ سے زیادہ اور سبک اقدامات کے ساتھ کورونا ٹیسٹ ہونا پڑتا ہے جو اس روبوٹ کی ایجاد کی بڑی کامیابی ہے۔

ان روبوٹس کی خاص بات یہ ہے کہ اس کھیل کے میدانوں ، تھیم پارسکیٹ اور دوسرے عوامی مقامات پر جہاں جانا ممکن ہے جہاں کورونا ٹیسٹ ہونا ممکن ہے۔

یہ واضح ہے کہ جاپان میں اس وقت کی روزہ صرف ہزاروں افراد کی تعداد میں ہے اور حکومت کو بہت مشکل ہے۔ جاپان میں 3 لاکھ 37 ہزار افراد کورونا سے متاثر ہوئے اور یہ مہلک وائرس 4 ہزار 598 افراد کی جان لے گئے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here