اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) نے جمعرات کے روز 18 ستمبر کو ختم ہونے والے ہفتے کے دوران حکومت کی طرف سے بیرونی قرضوں کی ادائیگیوں کے سبب ریاستہائے متحدہ امریکہ کے ڈالر (119) ڈالر کے غیر ملکی ذخائر میں کمی کا اعلان کیا ہے۔

مرکزی بینک کی طرف سے جاری کردہ اعلامیے کے مطابق ، ملک کے پاس موجود مائع غیر ملکی ذخائر 18 ستمبر -2020 ء کو 19،903.7 ملین امریکی ڈالر تھے۔

غیر ملکی ذخائر کی پوزیشن کو توڑتے ہوئے ، ریاستی بینک کے پاس 12،701.6 ملین امریکی ڈالر کے ذخائر ہیں جبکہ اس کے مقابلے میں تجارتی بینکوں کے پاس 7،202.1 ملین امریکی ڈالر کے ذخائر ہیں۔

اس سے قبل 17 ستمبر کو 11 ستمبر کو ختم ہونے والے ہفتے کے دوران اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کے خالص ذخائر 13 ملین ڈالر اضافے سے 12.82 بلین ڈالر ہوگئے تھے۔

ان ذخائر کی پوزیشن کی تفصیل دیتے ہوئے اسٹیٹ بینک نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ملک کے مجموعی غیر ملکی ذخائر 19.95 بلین ڈالر ہیں۔

اس کو توڑتے ہوئے کہا گیا ہے کہ اس وقت اسٹیٹ بینک کے پاس 12.82 بلین ڈالر اور 7.13 بلین ڈالر کے غیر ملکی ذخائر کمرشل بینکوں کے پاس ہیں۔


YT چینل کو سبسکرائب کریں

Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here