لاہور:بلبل صحرا ریشماں کوہم سے بچھڑے 7 سال گزرتے ہیں لیکن ان کی گیت آج بھی سماعت کرتے ہیں۔

بلبل صحرا ریشماں کوہم سے بچھڑے 7 سال گزرگئے لیکن ان کی گیت آج بھی سماعتوں کو کو معطرکرتے ہیں۔ ریشماں کی پیدائش کے ہندوستانی علاقوں راجستان میں 1947 میں میں ، ہ ء میں ، ہجرت کے بعد کراچی کواپنا مسکین بنایا گیا۔ 12 برس کی عمر میں وہ سیہون شریف میں لعل شہباز قلندر کی درگاہ پر فن کا مظاہرہ کر رہے تھے۔

ریڈیوپاکستان سے گونجتی آواز جب ٹی وی پرآئی تواسے سرحدوں کی لمبی دیواریں بھی نہیں روکیں۔ 80 سال کی دہائی میں ہندوستانی فلموں میں گیت لمبی جدائی نے اس شہر کو افق پرپہنچا دیا۔ یہ ریشماں ہیرو جن جن پاس پاس پاس پاس پاس تعلیم تعلیم تعلیم تعلیم تعلیم تعلیم تعلیم تعلیم تعلیم تھا تھا تھا تھا تھا تھا تھا تھا تھا تھا تھا تھا تھا تھا لیکن لیکن لیکن لیکن لیکن لیکن لیکن لیکن لیکن لیکن بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت بھارت آن آن آن آن آن آن آن آن آن آن وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم وزیراعظم سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت سمیت نظر نظر گن نظر نظر نظر نظر نظر نظر تھیں تھیں نظر

حکومت پاکستان کی طرف سے کچھ حاصل شدہ ایوارڈ والے حسن کارکردگی اورپھرستارہ امتیاز سے بھی نوازا گیا۔ پاک سائن آف ریشماں 3 نومبر 2013 کو کینسرے لڑکے سے خالق حقیقی سے جاملیں۔

پوسٹ بلبل صحرا ریشماں کوہم سے بچھڑے 7 سال گزرگئے پہلے شائع ہوا ایکسپریس اردو.

Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here