واشنگٹن: امریکی انتخابی انتخاب میں ڈیموکریٹک پارٹی کے امیدواروں نے صرف 6 الیکٹرک ووٹ دوری پر فتح حاصل کی ہے اور اب ان تمام نگاہوں کو 4 ریاستوں کے نتائج کا سامنا کرنا پڑتا ہے جب صدر نے ایک بار پھر اپنے علاقوں میں انتخابی کارروائی کی ہے۔ ہیں۔

اس وقت پینسلوینیا ، جارجیا ، نیواڈا اور شمالی کیرولینا میں وووک کی گنتی جاری ہے اور بائڈن کو نیواڈا ہی 6 الیکٹورل ووٹ ملک کے مقامات ہیں جو ان کی کامیابیوں سے متعلق ہیں۔ انتخابات میں ڈالر کے قریب قریب 14 برسوں کی گنتی مکمل ہوچکی ہے جو خود امریکی تاریخ میں انتخابی انتخابات کے دوران ڈالروں کی تعداد میں زیادہ تعداد میں بھی ہے۔

واضح رہے کہ امریکہ میں ووٹروں کی مجموعی تعداد 24 برس لگ رہی ہے۔ 2016 کے انتخابی انتخابات میں ، جس طرح کی ڈونلڈ میں امریکی صدر بن گئے تھے ، 59.2 فیصد امریکی ووٹروں نے اپنا حق قبول نہیں کیا تھا۔ اب تک گنتی کی شرح فیصد 60 فیصد تک پہنچ رہی ہے اور بعض سیاسی مبصرین کے یہاں پیش گوئی کی گئی ہے کہ یہ شرح 65 یا فیصد ہے یا اس سے کہیں زیادہ ہوسکتی ہے۔

264 الیکٹورل ووٹس حاصل کرنے کے بعد ڈیموکریٹک پارٹی کے امیدوار بائڈن کے قریب فتح کے قریب پہنچ چکے ہیں۔ امریکہ میں گرمی کی امید پر حتمی فتح کی ضرورت ہے جو وہ 270 یا زیادہ الیکٹرور ووٹس حاصل کرسکتی ہے۔

دوسری امریکی صدر اور ری پبلکن امیدوار ڈونلڈ ٹرک 214 الیکٹورل ووٹس حاصل کر رہے ہیں۔ اب ان کی جیت مکمل داردار اور مدار سوئنگ اسٹیٹس پر ہے۔ البتہ امریکی سیاسی مبصرین کا کہنا ہے کہ یہ ایک سوئنگ اسٹیٹ سے بھی زیادہ الیکٹرورل واٹس مل پڑے گی اور وہ بھی مجموعی طور پر 268 الیکٹرل ووٹ ہیپی کری رہے گی۔

جو بائیڈن اگرچہ فتح کے بارے میں بہت ساری باتیں کر رہے تھے لیکن وہ حامیوں کے بارے میں بتاتے ہیں کہ جب تکمیل نہیں ہوسکتی ہے تو اس کی عبادت کا کوئی اعلان نہیں ہوگا۔ جب دوسری ریاست کے انتخابی عمل میں سنگین سوالات لڑ رہے تھے۔

قبل ازیں ٹورنامنٹ کی انتخابی مہم کے منیجر نے اعلان کیا تھا کہ وسکونسن میں دھاندلی ہوچکی ہے اور دوبارہ گنتی کی بازیابطہ کی درخواست دائر کریں گے ، کمپین ٹیم کے ساتھ ریاست کی مشاورت گین میں ووٹنگ کی گنتی بیٹیاں عدالت سے رجوع ہوگئی۔ اس کے علاوہ ازراہ ٹورنامنٹ ٹیم نے پنسلوانیا میں گنتی چلانے والے عدالت کے فیصلے کا اعلان کیا ہے۔ اس میں مشیگن میں دوبارہ گنتی کروانے کی درخواست مسترد کردی گئی ہے۔

حالیہ امریکی انتخابات میں عوامی جوش اور خروش بہت اہم باتیں ہیں جن کے بارے میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ اس سے پہلے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ اس سے پہلے 7 فیصد 25 لاکھ سے زیادہ عوامی ووٹ حاصل کر رہے ہیں۔ لیکن ٹچ بھی تقریر میں 6 کروڑ 90 لاکھ ووٹ حاصل کرچکے ہیں۔ اس طرح سے دونوں امیدوں کو کوڑے والوں میں صرف ایک ڈھائی فیصد فرق ہے۔

دریں اثنا ڈیلاویئر سے سارہ میک برائیڈ نام ایک ٹرانسفر جینڈر امریکی امریکی سینیٹ کی نشست جیتنے والی ، لیکن یہ بھی امریکی تاریخ میں پہلی بار ہوا ہے۔

خدارا نہیں نارتھ ڈکوٹا سے ایک بار امیدوار کوہ فاتح ٹھیکیدگی سے متاثرہ ایک ماہ پہلے ہی کورونا وائرس کی وجہ سے منتقلی کرچکا تھی۔

ڈیموکریٹک پارٹی کے حامیوں نے وائٹ ہاؤسز سے باہر کے علاقوں میں ہونے والے احتجاجی مظاہرے کے مختلف مقامات پر کشمیری اور جو بائیڈن حامیوں نے علیحدہ علیحدہ مظاہرے بھی موجود تھے۔ اس کے علاوہ دوسرے شہروں میں سیاہ فام حقوق کے حقوق کے بارے میں آواز اٹکیوٹو اور ٹریڈنگ کے حامی مابین تصادم کی اطلاعات بھی موصول ہیں۔

دوسری جماعت ڈیموکریٹک پارٹی 5 سیاہ فام مسلمان امیدواروں کو بھی وسکونسن ، فلوریڈا اور ڈیلاویئر قانون ساز ایوین کا انتخاب جیتنے کے لئے امریکہ میں ایک نئی تاریخ رقم کرسی ہے۔ اس میں تین مسلمان بھی شامل ہیں۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here