ایک ترجمان نے ہفتے کے روز بتایا کہ ایپل انک نے لندن میں حکومت کی طرف سے متعارف کرائی جانے والی پابندیوں کے بعد کیلیفورنیا میں اپنے 53 اسٹوروں کو عارضی طور پر کیرولینا میں پھیلنے اور برطانیہ میں 16 اسٹوروں کو عارضی طور پر بند کردیا ہے۔

کمپنی نے جمعہ کے روز کہا کہ وہ COVID-19 کے معاملات میں اضافے کے بعد کیلیفورنیا میں عارضی طور پر کچھ اسٹورز بند کررہا ہے ، جس کے بعد بیل بنانے کے بعد آئی فون بنانے والے کے حصص کو تجارت میں بھیج دیا گیا۔ اس اعلان میں کم از کم 12 اسٹورز کا احاطہ کیا گیا تھا۔

“ہم جن برادریوں کی خدمت کرتے ہیں ان میں موجودہ COVID-19 کے حالات کی وجہ سے ، ہم ان علاقوں میں عارضی طور پر اسٹورز بند کر رہے ہیں۔ ترجمان نے ایک ای میل بیان میں کہا ، “ہم یہ قدم بہت احتیاط کے ساتھ اٹھا رہے ہیں کیونکہ ہم صورتحال پر قریبی نگرانی کرتے ہیں اور ہم اپنی ٹیموں اور صارفین کو جلد سے جلد واپس آنے کے منتظر ہیں۔”

ترجمان نے بتایا کہ صارفین اگلے کچھ دنوں کے لئے موجودہ احکامات کو اٹھاسکیں گے۔ بیان میں اس بات کا تذکرہ نہیں کیا گیا جب ایپل کی توقع ہے کہ اسٹورز دوبارہ کھولے جائیں گے۔

ریاستہائے متحدہ اور برطانیہ میں کورونا وائرس کے واقعات میں اضافہ ہورہا ہے ، اس کے ساتھ ہی امریکہ کو 17.4 ملین سے زیادہ انفیکشن اور 314،000 اموات ہوچکی ہیں۔

برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے ہفتے کے روز انگلینڈ میں 16 ملین سے زائد افراد پر ایک موثر لاک ڈاؤن نافذ کیا اور کرسمس کے موقع پر روک تھام کو آسان بنانے کے منصوبوں کو تبدیل کردیا۔ برطانیہ کی دوسری اقوام ، جن کے وبائی مرض کا جواب کبھی کبھی انگلینڈ سے مختلف ہوتا ہے ، نے بھی کارروائی کی۔

جانسن نے کہا کہ لندن اور جنوب مشرقی انگلینڈ کو اب ایک نئے ٹیر 4 سطح کی لاک ڈاؤن میں رکھا جائے گا اور ان علاقوں میں لوگوں کو کام کی طرح ضروری وجوہات کے علاوہ گھر پر ہی رہنے کی ضرورت ہوگی۔ ڈور فرصت اور تفریح ​​کے ساتھ ہی غیر ضروری خوردہ بھی بند ہوجائے گا۔


YT چینل کو سبسکرائب کریں

Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here