ایپل کمپنی نے پہلے مرتبہ میک بک میں اپنا تیار کردہ پروسیسر استعمال کیا ہے۔  فوٹو: ایپل کمپنی

ایپل کمپنی نے پہلے مرتبہ میک بک میں اپنا تیار کردہ پروسیسر استعمال کیا ہے۔ فوٹو: ایپل کمپنی

سان فرانسسکو: ایپل والے ہر میک بک لیپ ٹاپ میں پہلی مرتبہ مائیکرو پروسیسر سیکریا ہیں جو خود ڈیزائن اور تیار ہے۔ ایم ون نامی اس پروسیسر 11 ٹریلین حادثہ فی سیکنڈ کی رفتار سے پروسیسنگ کے دستاویزات ہیں۔ اس حساب کی قوت 16 ارب ٹرانسفر کی طرح ہے۔ اس طرح پچھلی میک بک سے اس کی رفتار ساٹھ تین گنا ہے۔

ون مورن تھنگ نامی ورچول ایونٹ میں دعویٰ کیا ہوا ہے کہ دنیا بھر میں کوئی بھی کم پیشل سی سی کے مقابلے میں نئی ​​میک بک ایئر کی موجودگی میں شامل نہیں ہوا۔ اس طرح ایپل کی تاریخ میں تیز میکسیکو بک بھی ہے جس میں یونیفائیڈ میموری آرکٹیکچر ، انٹی گریڈڈ جی پی یو ، نیورل انجن اور دیگر بڑے خواجہ موجود ہیں۔

واضح ہے کہ میک بک ایئر ، میک بک پرو اور میک مینی میں اس سارے فیکٹر کے پیش کش ہوں گے اور اس کی فروخت کا اگلا ہفتہ شروع ہوگا۔ دوسری بات یہ ہے کہ اس کی بیٹری بھی میکا بک کرتی ہے اور 18 گھنٹوں تک اس ویڈیو پر جاسکتی ہے۔ دوسری وائرلیس ویب براؤزنگ کی حد بھی بڑھ رہی ہے 15 گھنٹے

کورونا وبا کے تناظر میں نئی ​​میک بک میں تبدیل کئی تبدیلیاں ہوچکی ہیں ، لوگ دس دس گھنٹے آن لائن کام کرتے ہیں اور لمبی ویڈیو کانفرنسنگ میں مصروف رہتے ہیں۔ 16 جی بی کی میموری سے شروع ہونے والی والی بک میں دو ٹیرابائٹ تک ہارڈ ڈسک رکھی ہوئی ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here