ہندوستانی سیاح دیپ ڈیسائے نے 28 دسمبر 2020 ء کو مکروہ جرم کیا ، افغان پولیس۔  فوٹو: فائل

ہندوستانی سیاح دیپ ڈیسائے نے 28 دسمبر 2020 ء کو مکروہ جرم کیا ، افغان پولیس۔ فوٹو: فائل

کابل: افغان دارالحکومت کابل میں 15 سالہ لڑکی سے جنسی دور کی گھنٹوں تکلیف دہ فعل ہندوستانی گروہ میں واقع نکلا۔

افغان میڈیا پر مبنی افغانستان میں ہندوستانیوں کی غیر اخلاقی سرگرمیاں عروج پر ہیں اور اس کی وجہ سے جنسی استحکام اور ان کا واقعہ منظر عام پر آگیا ہے۔

افغان پولیس سپریٹنڈینٹ راشد خان کی نسبت دارالکومت کابل میں کم سن بچی سے لے کر جنسی زیادتی کے گھنٹوں کے بارے میں بھارتی گروہ واقع نکلا ، بھارتی سیاح دیپ ڈسائے نے 28 دسمبر 2020 کو 15 سالہ افغان لڑکی سے جنسی استحصال کیا اور اس مکروہ کی سرگرمی بھی پیش کی۔ بنائی۔

ہندوستانی سیاح دیپ ڈیسائے نے لڑکی افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان افغان لڑکی لڑکی لڑکی افغان لڑکی لڑکی لڑکی لڑکی لڑکی لڑکی لڑکی لڑکی لڑکی لڑکی لڑکی لڑکی لڑکی لڑکیکرکرکرکرکرکرکرجیجیجیجیجیجیجیجیجیجیجیجیجیجیجیجیجیجیجیجیجیجیجی رابط رابط رابط رابط رابطےےے ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب ویب۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ گئی۔۔۔۔۔۔ گئی۔ گئی۔ گئی گئی گئی گئی گئی گئی گئی گئی گئی گئی گئی گئی۔ گئی گئی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ گئی گئی گئی۔۔۔۔۔۔

افغان پولیس کے مطابق واقعہ کی اطلاع ملٹی ہی ملزم کے خلاف واقعہ درج ذیل ہے 4 ان ٹیموں کے ذریعہ یقین دہانی کرائی گئی ، اور کارروائی سے متعلق سیاح دیپ ڈیسرے کو غلطی ہوئی تھی ، جب اس کی آن لائن تشخیصی کو روکنے کے لئے اقدام کیا گیا تھا۔ ’’۔

افغان میڈیا یہ بات نہیں کرتا ہے کہ افغانستان میں افغان بچی کیساتھ لمبا بھارتی شہری تھے ، اس سے پہلے بھی وہ بھارتی دفاعی اتاشی بریگیڈیئر ایس نارائن نہیں تھی جو ایک لڑکی بھی جنسی استحصال کی تھی ، افغان لڑکی نے تعلیمی وظیفے کا مظاہرہ کیا تھا۔ اس کے حصول کے لئے سفارتخانہ میں درخواست دی تھی ، لیکن اس کے بعد کے صفت ہندوستانی دفاع اتاشی بریگیڈیئر نارائن نے کہا کہ اس لڑکی کو سفارتخانہ میں ایک لمبا کا نشانہ بنایا گیا تھا ، جس کے بعد کے امریکی سفارتخانہ میں متعین دفاعی اتاشی کو ملک بدر کر دیا گیا تھا۔ کوئی قانونی کارروائی عمل میں نہیں لائی گئی ، جب تین ہفتہ قبل بھی تین بھارتی فوجیوں کی ملک کی عزت کو کوٹ کر تار تار میں آیا تھا۔

واضح رہے کہ بھارتی فورسز مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھی کئی تعداد میں اجتماعی لمبائی کا نشانہ بنایا گیا ہے ، ہندوستانی فوج ، اقوام متحدہ متحدہ مشنز میں بھی جنسی زیادتی کے واقعات میں کئی افراد ، غیرملکی خواتین کے سیاح ، ہندوستان ہندم بن بن اور متعدد غیرملکی شامل ہیں۔ ہندوستانی شہریوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانا ، جب عالمی سطح پر جنسی زیادتی کے واقعات واقعات میں ہندوستانی دارالحکومت نئی دہلی سرفہرست ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here