مجموعی طور پر ان تمام کاروں کی کم از کم مالیت ساست بارہ ارب ڈالر سے بھی زیادہ بنٹی ہے۔  (فوٹو: انٹرنیٹ)

مجموعی طور پر ان تمام کاروں کی کم از کم مالیت ساست بارہ ارب ڈالر سے بھی زیادہ بنٹی ہے۔ (فوٹو: انٹرنیٹ)

بیجنگ: چین کی ایک اسٹیل مل نے مسلسل پانچ سال تک ہدف سے زیادہ منافع کمانے کے لئے اپنے ملازمین میں ہزاروں مہنگی گاڑیاں بٹور انعام بانٹ دی جنوری سے لے کر ایک گاڑی کی مالیت میں کم 20 ہزار ڈالر یعنی قریب تیس ہزار لاکھ پاکستانی شہری شامل ہیں۔

خبروں کے مطابق ، چین کی جیانگژی ویسٹ داجیو آئرن اینڈ اسٹیل کارپوریشن ” یکم اکتوبر سے روزنامہ 4،116 کشمیری ملازمت کو منفرد انداز سے نوازا گیا ، جن کی بدولت اس اسٹیل مل کے ہر سال اپنے مقصد سے زیادہ فائدہ اٹھایا گیا۔ ۔

اسٹیل مل انتظامیہ نے اس روزہ کے ایک بڑے میدان میں خصوصی ملازمت اختیار کی جس میں ملازمت کو کوٹیاں مہنگی کاریں بٹور انعام دی گواہ تھیں۔

https://www.youtube.com/watch؟v=MKI19AHYIpc

ان میں 1،183 ملازمین کو ” فا فوکس ویگن میگوٹان ” میں 2،933 کوٹ ” جیانگلنگ فورڈ ٹریٹری ” کاریں بٹور انعام دی گواہ۔ اس میں ہر ایک کار کی کم قیمت 20 ہزار ڈالر یعنی تقریباً 30 لاکھ ڈالر ہے۔

اس طرح یہ تمام چیزیں کم مالیت ساست بارہ ارب ڈالر سے بھی زیادہ بنٹی ہیں۔

ذرائع ابلاغ پر جب یہ خبر آتی ہے کہ بعض اوقات کسی کمپنی نے گاڑیوں کی مالیت جتنی رقم وصول کی ہے تو ملازمین کو بٹور انعام دینی کی سہولت ہے یا اس کی سہولت یا ضرورت کی ضرورت نہیں ہے۔ تاہم ، ملازمین کو آزادی ہے کہ وہ اس گاؤں کی قیمت بھی دیکھتے ہیں۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here