آرمینیائی باشندوں نے معاہدے کے تحت علاقہ چھوڑنے سے پہلے اپنے گھر والوں کو آگ لگادی ہے (فوٹو ، رائٹرز)

آرمینیائی باشندوں نے معاہدے کے تحت علاقہ چھوڑنے سے پہلے اپنے گھر والوں کو آگ لگادی ہے (فوٹو ، رائٹرز)

باکو: آرمینیا اور آذربائیجان کے درمیان امن معاہدے طے پانے کے بعد متنازع علاقوں سے آرمینیائی باشندوں کے انخلاء کا عمل شروع ہوا ہے اور مقامی آرمینیا آئی باشندوں نے آذربائیجان کی فوج کو پہلے گھروں میں خود آگاہی دی ہے۔

ایکسپریس نیوز کی رپورٹ کے مطابق ناگورنو کاراباخ کے علاقوں سے آرمینیائی باشندوں کے انخلاءشروع مقام۔ اپنے آبائی گھر آذربائیجان کی فوج سے پہلے ہونے والی آرمینیائی باشند اور گھروں میں خود آگاہی دیجلاتی گھروں سے آگئے تھے ، ان لوگوں کا خیال کیا تھا کہ بادل فضا میں میل میل دور نظر آرہے ہیں۔

امن معاہدوں کے مطابق متنازع کے علاقوں میں آرمینیہ کے باشندوں کو ایک ہفتے کے دوران بھی علاقہ خالی ہونے کا حکم دیا گیا ہے۔ علاقوں میں کنٹرول آذربائیجان کوآرمینیا سے متعلق ناگورنو کاراباخ کی مصقمی افراد کا احتجاج جاری ہے۔

دوسری بار عورت آرمینیا کے وزیر اعظم کے خلاف ریلیاں نکالی گئیں اور نعرے بازی بھی۔ مقامی پوجا گاہکوں کا خیرمقدم رہنا ہے۔

لڑائی میں دونوں ممالک میں ہمیشہ ہی فوجیوں کی لاشوں کا تبادلہ بھی ہوتا ہے ، آذربائیجان اور روس کے درمیان ایک معاہدے کے مطابق روس کے پاس 2 ہزار فوجی اہلکار سولہ مقامات پر تعینات رہتے ہیں۔

روسی ملٹری کے ہیلی کاپٹرز ناگورنو کاراباک کے علاقوں میں پہناؤ دے رہے ہیں۔ آہستہ آہستہ علاقوں کا کنٹرول آذربائیجان کی فوج کو دینے کا عمل جاری ہے۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here